زیادتی کے بعد بچے کو قتل کرنیوالا ملزم ساتھی سمیت گرفتار

زیادتی کے بعد بچے کو قتل کرنیوالا ملزم ساتھی سمیت گرفتار
زیادتی کے بعد بچے کو قتل کرنیوالا ملزم ساتھی سمیت گرفتار

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

حافظ آباد(ویب ڈیسک)5سالہ معصوم شہروز کو زیادتی کے بعد قتل کرنے کی لرزہ خیز واردات کا مرکزی ملزم مبینہ ساتھی سمیت12گھنٹے کے اندر گرفتار کرلیا گیا جس   نے گھنائونے فعل کا اعتراف کر لیا۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ڈی پی او ڈاکٹر سردار غیاث گل نے ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ جمعہ کے دن 2بجے اغوا کرکے زیادتی کے بعد بہیمانہ طریقے سے قتل ہونیوالے معصوم شہروز کے قاتلوں کی تلاش کیلئے ڈی ایس پی صدر سرکل میاں توصیف کی سربراہی میں ایس ایچ او سٹی اعجاز بٹ اوردیگر ٹیم نے پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کی ٹیم کے ہمراہ جائے وقوعہ کا معائنہ اور ڈی این اے کیلئے نمونے اور دیگر شواہد اکٹھے کئے ،معصوم بچے کی لاش کو پلاسٹک کی 2بوریوں میں بند کرکے پھینکا گیا تھا۔

مالک مکان احمد علی اور اس کے بیٹے وسیم عرف نومی کو حراست میں لیکر تفتیش کی گئی تو ملزم نے اپنے گھنائونے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ اس عمل میں سلیمان عرف شانی بھی ملوث ہے جس پر دوسرے ملزم کو بھی گرفتار کر لیا گیا۔ مرکزی ملزم وسیم عرف نومی نے دوران تفتیش بتایا کہ بچے کو اکیلا دیکھ کر اسے پیسے اور کھانے والی چیز کا لالچ دیکر اپنے گھر لے گیا جہاں اسے زبردستی زیادتی کے بعد راز افشا ہونے کے خوف سے گلا دبا کر ہلاک کر دیا بعدازاں بوری میں بند کرکے پھینک دیا۔دونوں ملزموں کی عمر 16سے 18سال کے درمیان ہے۔

ڈی پی او نے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے بتایا کہ جس چادر پر بچے سے زیادتی کی گئی وہ بھی برآمد کر لی گئی ہے جبکہ ملزموں کا ڈی این اے اور پولی گراف ٹیسٹ بھی کروایا جائے گا۔

دوسری طرف شہری حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ جرم ثابت ہونے پر مجرموں کو سرعام پھانسی دی جائے۔پانچ سالہ شہروز کو آہوں اورسسکیوں میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ پوسٹمارٹم کی ابتدائی رپورٹ کے مطابق شہروز کو بد فعلی کے بعد گلے میں پھندا ڈال کر جان سے مارا گیا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /حافظ آباد