کرونا وائرس، ایشیائی ترقیاتی اور عالمی بینک پاکستان کو 58کروڑ ڈالر دینگے

کرونا وائرس، ایشیائی ترقیاتی اور عالمی بینک پاکستان کو 58کروڑ ڈالر دینگے

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)کرونا وائرس سے لڑنے کیلئے عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کو مالی امداد کی پیشکش کر دی ہے۔ پاکستان میں بھی کرونا وائرس کے تیزی سے پھیلنے کے باعث ایشیائی ترقیاتی بینک پاکستان کو مجموعی طور پر 35کروڑ ڈالر فراہم کرے گا۔ جس میں سے 5کروڑ ڈالر کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے دئیے جائیں گے۔ ایشیائی ترقیاتی بینک کی رپورٹ کے مطابق رواں سال پاکستانی معیشت کو کرونا وائرس سے پانچ ارب ڈالر تک کا نقصان پہنچ سکتا ہے۔ عالمی بینک نے بھی 18کروڑ 80لاکھ ڈالر دینے کی پیشکش کی ہے، یہ رقم فوری طور پر ہسپتالوں کو منتقل کی جائے گی۔اس حوالے سے پاکستان اور عالمی مالیاتی اداروں کے درمیان معاہدے جلد متوقع ہے۔یہ فنڈز کرونا وائرس پر قابو پانے کے لیے این ڈی ایم اے کے ذریعے خرچ کیے جائیں گے۔اے ڈی بی کی طرف سے بھی 5کروڑ ڈالر فوری جاری کیے جانے کا امکان ہے۔جبکہ دوسری جانب انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ(آئی ایم ایف)نے حکومتوں پر زور دیا ہے کہ عوام کو کرونا وائرس سے پیدا ہونے والے عالمی طبی بحران کے معاشی اثرات سے تحفظ فراہم کیا جانا چاہیے۔واشنگٹن میں آئی ایم ایف کی جانب سے جاری گائیڈ لائنز میں کہا گیا کہ جو سب سے زیادہ متاثر ہیں انہیں اپنی غلطی کے بغیر دیوالیہ کا شکار نہیں ہونا چاہیے، سیاحت پر انحصار کرنے والے ملک میں ایک ریسٹورنٹ یا قرنطینہ کی وجہ سے بند ہونے والی فیکٹری کے ملازمین کو اس بحران میں تعاون کی ضرورت ہے۔آئی ایم ایف نے بتایا کہ ان کے پاس 50ارب ڈالر ہنگامی تعاون کے لیے دستیاب ہیں جس سے وہ وائرس سے متاثرہ ممالک کی مدد کریں گے۔ آئی ایم ایف کی مینیجنگ ڈائریکٹر کرسٹالینا جارجیوا نے کہا کہ ہمیں اس کے بدلے صرف یہ ضمانت چاہیے کہ لوگ پیسوں کی وجہ سے مریں گے نہیں۔ہمارا ادارہ ہم سے رابطہ کرنے والی ابھرتی ہوئی مارکیٹوں کو 40ارب ڈالر فراہم کرسکتا ہے۔ آئی ایم ایف اپنے رکن ممالک، بالخصوص خطرات کا سامنا کرنے والوں کے ساتھ تعاون کرنے کے لیے پرعزم ہے۔دوسری جانب وزارت منصوبہ بندی نے کرونا وائرس کے خلاف”پاکستان قومی ایمرجنسی پلان“ کی منظوری دے دی ہے جس کے تحت کرونا کے مریضوں کیلئے رضا کار بھی فراہم کیے جائیں گے،ہیلتھ ٹیمز اور طبی عملے کیلئے حفاظتی لباس بھی فراہم کیا جائے گا۔بدھ کووزارت منصوبہ بندی میں چیئرمین پلاننگ کمیشن جہانزیب خان کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں ورلڈ بنک اور ایشیائی ترقیاتی بینک کے کنٹری ڈائریکٹرز نے شرکت کی۔عالمی اقتصادی ادارے مجموعی طور پر پاکستان کو58کروڑ80لاکھ ڈالر فراہم کریں گے۔ اس رقم سے قومی ایمرجنسی پلان کے تحت ملک بھر میں آئسولیشن رومز کے قیام کیلئے فنڈز فراہم کیے جائیں گے۔ ملک بھرمیں کرونا وائرس کی نگرانی کا مربوط نظام تشکیل دیا جائے گا۔کرونا کے مریضوں کیلئے وینٹی لیٹرز بھی فراہم کیے جائیں گے۔

عالمی بنک

مزید :

صفحہ اول -