ملزمان گرفتار،بھاری مقدار جدید خود کار اسلحہ اور منشیات برآمد

ملزمان گرفتار،بھاری مقدار جدید خود کار اسلحہ اور منشیات برآمد

  

پشاور(کرائمز رپورٹر) کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے امن و امان کی صورتحال کو بر قرار رکھنے اور منشیات کی روک تھام کی خاطر خصوصی کریک ڈاؤن کرتے ہوئے مختلف تھانوں کی حدود میں کاروائیوں کے دوران بھاری مقدار میں جدید خودکار اسلحہ اور منشیات برآمد کر لی گئی،گرفتار ملزمان میں تعلیمی اداروں کے آس پاس منشیات فروخت کرنے والے افراد بھی شامل ہیں،جنہوں نے ابتدائی تفتیش کے دوران منشیات فروشی کے مکروہ دھندے اور دیگر جرائم میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا ہے، جن کے قبضے سے مجمو عی طور پر تین عدد کلاشنکوف،چار عدد بندوق،10عدد پستول،10 کلوگرام چرس اور ہزاروں روپے مالیت کی آئس برآمد کرلی گئی ہے تمام ملزمان کے خلاف مقدمات درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ہے تفصیلات کے مطابق سی سی پی او محمد علی گنڈا پور کی ہدایت پر ا یس ایس پی آپریشن ظہور بابر آفریدی کی نگرانی میں امن و امان کی صورحال کو بر قرار رکھنے اور منشیات کی روک تھام کیلئے منشیات فروشوں کے خلاف جاری کریک ڈاؤن میں تیزی لاتے ہوئے مجموعی طور پر23 ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے، جس کے دوران ایس ایچ او تھانہ سربند مثل خان نے باڑہ قدیم ناکہ بندی پر دو ملزمان ثاقب ولد شاہین اور سجاد ولد جمال کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے 5 کلو گرام چرس برآمد کر لی گئی جبکہ ایس ایچ او تھانہ تاتارا نعیم حیدر خان نے کامیاب کارروائی کے دوران ملزم صابرشاہ ولد بادشاہ کو گرفتا ر کر کے اان کے قبضے سے دو کلو گرام چرس اور ہزاروں روپے مالیت کی آئس برآمد کر لی گئی،گرفتار ملزم نے ابتدائی تفتیش کے دوران حیات آباد اور ملحقہ علاقوں میں تعلیمی اداروں کے آس پاس منشیات سپلائی کرنے کا اعتراف کر لیا ہے اسی طرح دیگر کاروائیوں کے دوران تھانہ خان رازق شہید، تھانہ متھرا اور تھانہ داؤدزئی پولیس نے ملزمان زاہد ولد محمد ولی،عمران ولد قابل خان،اسرار ولد ازمر،شوکت ولد بوستان،حضرت خان ولد ہاشم اور محمد عالم ولد امین گل کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے تین عددکلاشنکوف،چار عدد بندوق اور دیگر مختلف تھانوں کے پولیس نے 13 افراد کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے 11 عدد پستول اور 3 کلو گرام چرس برآمد کرلی گئی،گرفتار ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران منشیات فروشی کے مکروہ دھندے اور دیگر جرائم میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا ہے جن کے خلاف مقدمات درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -