سول ڈیفنس کی کورونا وائرس کے پیش نظر رضا کاروں کو متحرک رہنے کی ہدایت

سول ڈیفنس کی کورونا وائرس کے پیش نظر رضا کاروں کو متحرک رہنے کی ہدایت

  

پشاور(سٹی رپورٹر)ڈائریکٹوریٹ آف سول ڈیفنس خیبر پختونخوا نے کرونا وائرس کے خدشے کے پیش نظر صوبہ بھر میں اپنے رضا کاروں کو متحرک رہنے کی ہدایات جاری کر دیئے ہیں۔ سول ڈیفنس حکام نے اپنے رضاکاروں کی تعداد بڑھانے اور قبائلی اضلاع میں سول ڈیفنس ٹریننگ اکیڈمی کے قیام کیلئے بھی اقدامات شروع کر دیے ہیں۔ اس حوالے سے سول ڈیفنس کے ڈائریکٹر فہد اکرام قاضی نے بتایا کہ کرونا وائرس سے پیدا ہونیوالی موجودہ صورتحال کے پیش نظر شہری دفاع کے رضاکاروں کو بھی الرٹ کر دیا گیا ہے اور جیسے ہی ان کو محکمہ ریلیف کی جانب سے احکامات دیئے جائینگے وہ حالات کے پیش نظر اپنے فرائض انجام دینگے۔ ان کا کہنا تھا کہ سول ڈیفنس کے پاس اس وقت صوبہ بھر میں پانچ ہزار تک رضاکار موجود ہیں تاہم آئندہ ہفتے سے ہر گھر سے ایک رضاکار پالیسی کے تحت ان کی تعداد دو لاکھ تک پہنچائینگے، ان کو سول ایڈ، قدرتی آفات سے نمٹنے، ابتدائی طبی امداد اور حالات جنگ میں اپنے فرائض کی انجام دہی سے متعلق تربیت دینگے، اس کے علاوہ محکمہ تعلیم کیساتھ انٹر طلبہ کو سول ڈیفنس کورس کی تربیت دلوانے کیلئے معاہدہ کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ سول ڈیفنس کی جانب پولیس، طلبہ اور مختلف سرکاری محکموں کے اہلکاروں کو قدرتی آفات اور ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کیلئے تربیت دی جا رہی ہے، اس کے علاوہ اب قبائلی علاقوں میں بھی رضاکاروں کی تعداد بڑھانے کیساتھ ساتھ سول ڈیفنس ٹریننگ اکیڈمی کے قیام کیلئے بھی اقدامات کر رہے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -