دنیا کی امیر ترین شہزادی کو کرپشن کے الزام میں 13 سال قید کی سزا

دنیا کی امیر ترین شہزادی کو کرپشن کے الزام میں 13 سال قید کی سزا
دنیا کی امیر ترین شہزادی کو کرپشن کے الزام میں 13 سال قید کی سزا

  

تاشقند(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا کی امیر ترین شہزادی کو کرپشن کے جرم میں 13سال قید کی سزا سنا دی گئی۔ میل آن لائن کے مطابق یہ ازبکستان کی شہزادی گلنار کریمووا ہیں جن پر 1ارب 70کروڑ پاﺅنڈ (تقریباً3کھرب14ارب 48کروڑ روپے)کرپشن کا الزام تھا جس پر ان کے خلاف مقدمہ چلایا گیا اور اب عدالت کی طرف سے انہیں 13سال قید سنا دی گئی ہے۔

ایک وقت تھا کہ ازبکستان کے سابق بادشاہ اسلام کریموف کی 46سالہ صاحبزادی شہزادی گلنار دنیا کی امیر ترین خواتین میں سے ایک تھیں، اس وقت وہ سوویت ممالک کی امیر ترین خاتون تھیں۔ ان کے خلاف اس مقدمے کے لیے تاشقند میں ایک خفیہ عدالت قائم کی گئی تھی۔ شہزادی گلنار برطانوی ملکہ الزبتھ کے کزن شہزادہ مائیکل کی دوست بھی ہیں۔

شہزادی گلنار نے ہارورڈ سے ایم بی اے کر رکھا ہے اور و ہ کئی طرح کے کاروبار کرتی ہیں۔ وہ مارشل آرٹس میں بلیک بیلٹ ہیں اور انہیں 4زبانوں پر عبور حاصل ہے۔ وہ جیولری ڈیزائنرہیں، بہترین شاعر اور پرفارمر ہیں اور کئی سپرہٹ پاپ گیت گا چکی ہیں۔ان پر الزام تھا کہ انہوں نے دھوکے سے ساڑھے 45کروڑ پاﺅنڈ کی جائیدادوں پر قبضے کیے اور 66کروڑ 40لاکھ پاﺅنڈ کی رقم کک بیکس میں حاصل کی جو ان کے آف شور اکاﺅنٹس میں منتقل کی گئی۔

ازبکستان میں تعینات رہنے والے سابق برطانوی سفیر کریگ مور نے گلنار کے متعلق بات کرتے ہوئے انہیں ’خوبصورت مگر جیمز بانڈ کی خاتون ولن جتنی خطرناک عورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کے والد کی حکومت کے دوران ازبکستان درحقیقت ’کرپٹستان‘ (کرپشن کے لحاظ سے)تھا۔ وہ پیرس ہلٹن سے زیادہ امیر، کہیں زیادہ چالاک اور خوبصورت ہے۔“

مزید :

بین الاقوامی -