کورونا وائرس کو COVID-19 کا نام دیا گیا ہے، اس کا کیا مطلب ہے؟ آپ بھی جانئے

کورونا وائرس کو COVID-19 کا نام دیا گیا ہے، اس کا کیا مطلب ہے؟ آپ بھی جانئے
کورونا وائرس کو COVID-19 کا نام دیا گیا ہے، اس کا کیا مطلب ہے؟ آپ بھی جانئے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کچھ اس خوفناک انداز میں دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے رہا ہے کہ اس کا نام ہماری روزمرہ لغت کا حصہ بن گیا ۔ آج دنیا میں کون ایسا شخص ہو گا جو ’کورونا وائرس‘ (Coronavirus)اور کووِڈ19 (COVID-19)جیسے الفاظ سے آشنا نہ ہو، مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ ’COVID-19‘ کے اس مخفف کا مطلب کیا ہے؟ دی مرر کے مطابق یہ لفظ دراصل تین الفاظ ’کورونا وائرس ڈیزیز‘ (Corona Virus Disease)کامخفف ہے اور اس کے ساتھ لگا 19 سال 2019ءکی غمازی کرتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق سال 2019ءسے شروع ہونے والی کورونا وائرس کی اس موذی وباءکے لیے اس نام کا انتخاب عالمی ادارہ صحت نے کیااورنام کے اس انتخاب میں ’او آئی ای اینیمل ہیلتھ‘ اور ایف اے او نے بھی عالمی ادارہ صحت کی معاونت کی۔ اس حوالے سے عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیڈروس ایدھنم نے ایک بیان میں کہا کہ ”ہم اس وباءکے لیے کوئی ایسا نام ڈھونڈنا چاہتے تھے جو کسی ایک ملک، علاقے، جانور، کسی شخص یا گروپ وغیرہ سے منسوب نہ ہو۔ کوئی ایسا نام ہو جو پوری دنیا کے لیے یکساں ہو کسی ایک ملک یا علاقے سے منسوب ہو کر اس کے لیے شرمندگی کا سبب نہ بنے۔ اس کے ساتھ ساتھ وہ بولنے میں آسان اور اس بیماری سے متعلق بھی ہو۔“ واضح رہے کہ عالمی ادارہ صحت کی طرف سے اس نام کے اعلان سے قبل دنیا بھر میں سائنسدان اس وباءکو ’2019-nCoV‘ کے نام سے لکھتے اور پکارتے رہے۔

مزید :

برطانیہ -