انگریزی زبان مکالمے اور مباحثے کیلئے نئے راستے کھولتی ہے 

    انگریزی زبان مکالمے اور مباحثے کیلئے نئے راستے کھولتی ہے 

  

لاہور(پ ر) امریکی قونصل جنرل لاہور ولیم کے مکانیولے نے مدرسہ سکولوں کے بیالیس انگریزی زبان کے اساتذہ کو امریکی سفارت خانہ اسلام آباد کی فنڈنگ کے تحت منعقد کیا گیا دو ہفتوں کا تربیتی پروگرام کامیابی سے مکمل کرنے پر مبارکباد دی، اس پروگرام کا عنوان 'غیر مرکزی دھارے کے اداروں سے انگریزی زبان کے اساتذہ کے لیے پیشہ ورانہ ترقیاتی پروگرام تھا۔قونصل جنرل مکانیولے نے کہا کہ انگریزی ایک بین الاقوامی زبان ہے جو مکالمے اور مباحثے کیلئے نئے راستے کھولتی ہے جس کے نتیجہ میں لوگوں کو مختلف مذاہب اور ثقافتوں کو سمجھنے میں مدد ملتی ہے۔ اس پروگرام میں پاکستان بھر کے مدرسہ سکولوں کے چار سو اساتذہ کو تربیت دی جائے گی۔ لاہور، گجرانوالہ، سیالکوٹ، فیصل آباد، ملتان اور ڈیرہ غازی خان کے نو سو سے زائد طلبا اس وقت امریکی مشن کے انگلش ایکسس مائیکرو اسکالرشپ پروگرام اور انگلش ورکس پروگرام سے انگریزی مہارت اور انٹرپرینیورشپ ڈویلپمنٹ پروگرام میں پڑھ رہے ہیں.قونصل مکانیولے نے بیاسی اساتذہ کے گروپ، جو یہ پروگرام مکمل کر چکے ہیں، کو بھی مبارکباد دی، اس پروگرام کے تحت چار اور گروپ مستفید ہوں گے. لاہور میں منعقد کی گی گریجویشن تقریب میں موجود اساتذہ سے گفتگو کرتے ہوئے قونصل جنرل مکانیولے نے کہا کہ بین المذاہب ہم آہنگی اور رواداری پیدا کرنے کے لئے تدریس، تبلیغ اور بین المذاہب مکالمے کے لئے مذہبی علما سمیت انگریزی زبان ایک اہم ذریعہ ہے جس سے بالآخر ہمیں عالمی سطح پر امن حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔ مکانیولے نے پیس اینڈ ایجوکیشن فاؤنڈیشن کے اشتراک اور ٹرینرز کا ان پروگراموں کو کامیاب بنانے کے عزم اور محنت کیلئے شکریہ ادا کیا۔

مکانیولے

مزید :

صفحہ آخر -