منحرف ارکان کو نااہل قرار دینے کیلئے  کوئی آرڈیننس تیار نہیں ہوا، اٹارنی جنرل 

   منحرف ارکان کو نااہل قرار دینے کیلئے  کوئی آرڈیننس تیار نہیں ہوا، اٹارنی ...

  

اسلام آباد (آئی این پی) اٹارنی جنرل آف پاکستان خالد جاوید خان نے پی ٹی آئی کے منحرف ارکان کو پانچ سال کے لئے نااہل قرار دیئے جانے کے لئے کسی بھی آرڈیننس کی تیاری کی رپورٹیں مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اٹارنی جنرل آفس میں کوئی آرڈیننس نہیں بنایا گیا اس سے پہلے نجی ٹی وی کی رپورٹ  میں دعویٰ کیاگیا کہ وفاقی وزارت قانون نے منحرف ارکان کو 5 سال کیلئے نااہل کرنے کا آرڈیننس لانے سے انکار کردیا۔رپورٹ میں کہاگیا کہ وزارت قانون نے اٹارنی جنرل کے آرڈیننس کے مسودے پراعتراض لگا دیا۔ ذرائع کے مطابق وزیر قانون نے آرڈیننس کے ذریعے الیکشن ایکٹ میں ترمیم کرنے سے معذرت کی اور کہا کہ آرڈیننس کے ذریعے ممبر پارلیمنٹ کو نااہل نہیں کیا جاسکتا، رکن اسمبلی کی نااہلی صرف پارلیمنٹ کے بنائے گئے ایکٹ کے ذریعے ہوسکتی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزرات قانون نے آرڈیننس کے ذریعے منحرف ممبران کیخلاف قانون سازی کرنے سے معذرت کرلی۔اٹارنی جنرل نے الیکشن ایکٹ میں 231 اے متعارف کرنے کے آرڈیننس کا مسودہ تیارکیا گیا ہے اور مجوزہ آرڈیننس کے مطابق الیکشن ایکٹ 231 اے کے ذریعے منحرف ارکان کو 5 سال کیلئے نااہل کیا جائے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیرقانون نے بتایا کہ آرٹیکل 63(1)(p) کی وضاحت کے مطابق قانونی نااہلی صرف پارلیمنٹ ایکٹ سے ہوسکتی ہے۔

اٹارنی جنرل

مزید :

صفحہ اول -