تحریک عدم اعتماد کے بعد وفاق میں اعلٰی سطح پر تقرراور تبادلے غیر آئینی ہیں: فضل الرحمن 

تحریک عدم اعتماد کے بعد وفاق میں اعلٰی سطح پر تقرراور تبادلے غیر آئینی ہیں: ...

  

       اسلام آباد (آئی این پی)پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم)کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے وزیراعظم کیخلاف تحریک عدم اعتماد کے بعد وفاقی حکومت کی جانب سے اعلی سطح پر تقرریوں اور تبادلوں کو غیر آئینی قرار دیدیا اور کہا ہے کہ تحریک عدم اعتماد کے بعد کسی قسم کی پوسٹنگ،اپائینٹمنٹ یااسے واپس لینا غلط قدم ہوگا اور اس کی مزاحمت کی جائے گی،سیاسی جماعتیں امید رکھتی ہیں کہ عدالتیں اس سلسلے میں اپنا کردار ادا کریں گی،ایمرجنسی یا گورنر راج نافذ کرنے کا اختیار بھی عمران خان کے پاس نہیں کیونکہ وہ اکثریت کھو چکے ہیں _جمعہ کو اپنے ایک بیان میں پی ڈی ایم اور جے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تحریک عدم اعتماد پیش ہونے کے بعد وزیر اعظم یا حکومت کی طرف سے کسی قسم کی ٹرانسفر یا تقرری یا اس سے منسلک حکم غیر دستوری اور غیر آئینی ہوگا،وزیر اعظم کے پرنسپل سیکریٹری اعظم خان کی فارن پوسٹنگ اقربا پروری کی واضح مثال ہے۔جوشخص گذشتہ کئی سال سے عمران خان کے سیکریٹری کے فرائض سرانجام دیتا رہا،اس کے اچھے برے اعمال میں شریک رہا، تحریک عدم اعتماد کے بعد فارن پوسٹنگ غیر قانونی اور غیر اخلاقی ہے۔مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تحریک عدم اعتماد کے بعد کسی قسم کی پوسٹنگ،اپائینٹمنٹ یا اسے واپس لینا غلط قدم ہوگا اور اس کی مزاحمت کی جائے گی،سیاسی جماعتیں امید رکھتی ہیں کہ عدالتیں اس سلسلے میں اپنا کردار ادا کریں گی،ایمرجنسی یا گورنر راج نافذ کرنے کا اختیار بھی عمران خان کے پاس نہیں کیونکہ وہ اکثریت کھو چکے ہیں۔

فضل الرحمن

مزید :

صفحہ اول -