حکومت اور ایف بی آر کے ظالمانہ اقدامات قبول نہیں،محمد جاوید میمن 

حکومت اور ایف بی آر کے ظالمانہ اقدامات قبول نہیں،محمد جاوید میمن 

  

سکھر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)سکھر اسمال ٹریڈرز کے صدر حاجی محمد جاوید میمن نے کہا ہے کہ حکومت اور محکمہ ایف بی آر کے ظالمانہ اقدامات کو نہ پہلے کبھی قبول کیا ہے اور نہ آئندہ قبول کرینگے، تاجر برادری کے دیئے ہوئے سے ٹیکس سے ملک کا پہیہ چلتا ہے اور حکمران اور افسران تنخواہیں لیتے ہیں، لیکن بدقسمتی سے ٹیکس ادا کرنے والے تاجروں کو سہولیات اور مراعات دینے کے بجائے انہیں ہی مزید نت نئے انداز سے ٹیکسز عائد کر کے تنگ و پریشان کیا جا رہا ہے، پوائنٹ آف سیل، جیولرز پر 17فیصد سیلز ٹیکس سمیت دیگر تاجر دشمن اقدامات کے خاتمے کیلئے اگر پورے ملک کاپہیہ جام کرنا پڑا بھی تو کرینگے، محکمہ ایف بی آر کی جانب سے 500 سے 600 اسکوائر فٹ والے دکانداروں کو بھی نوٹسز جاری کرنے کا سلسلہ شروع کر دیا ہے، جسے کسی بھی صورت برداشت نہیں کرینگے۔ ہم چھوٹے تاجروں کے حقوق کی حاصلات کیلئے کسی بھی صورت پیچھے نہیں ہٹھیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے شہداد پور تاجر اتحاد کے چیئرمین عاقل گل وسان، صدر عامر علی بھٹی، جنرل سیکریٹری امان ناگرا و دیگر کی جانب سے شہداد پور میں منعقدہ ملک گیر تاجر کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ کنونشن سے مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے صدر محمدکاشف چوہدری، سیکریٹری جنرل آغا عبدالقیوم، کامران میمن،عاشق حسین عباسی سمیت ملک بھر سے آئے ہوئے دیگر رہنماں نے بھی خطاب کیا۔ تاجر کنونشن میں سکھر اسمال ٹریڈرز کے رہنماں بابو فاروقی، محمد منیر میمن، ذاکر خان، لالہ محب، عاشق عباسی و دیگر شرکت کی۔ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے حاجی محمد جاوید میمن و دیگر رہنماں کا مزید کہنا تھا کہ حکومت اور محکمہ ایف بی آر کی ناقص پالیسیوں کی وجہ سے صنعت و تجارت کاروبار تباہی کے دھانے پر پہنچ چکا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -