فوڈ اتھارٹی کی کارروائی '4 ہزار لیٹر مضر صحت جوس برآمد

فوڈ اتھارٹی کی کارروائی '4 ہزار لیٹر مضر صحت جوس برآمد

  

پشاور(سٹی رپورٹر)خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اتھارٹی نے پشاور کے علاقے پھندو روڈ میں کاروائی کرتے ہوئے ایک یونٹ سے بڑی مقدار میں مضر صحت جوس برآمد کرلئے۔ گھر کے اندر قائم یونٹ میں جوس کے نام پر بچوں کے لئے مضر صحت مشروب تیار کی جارہی تھی، کریک ڈان کے دوران یونٹ سے 4 ہزار لیٹر سے زائد مضر صحت مشروب برآمد کیا گیا، کاروائی ڈائریکٹر جنرل خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اتھارٹی شاہ رخ علی خان کی ہدایت پر کی گئی، جس کے دوران جعلی مشروبات تیار کرنے والے یونٹ کو سیل کردیا گیا۔ فوڈ سیفٹی اتھارٹی کے مطابق یونٹ میں مختلف فلیورز میں مضر صحت مشروبات تیار کئے جارہے تھے، جس میں مضر صحت کیمکلز کا استعمال کیا جارہا تھا۔مشروب کو جوس کے نام پر پیک کیا جاتا تھا، جسے مارکیٹ میں 5 روپے کی پیکٹس کی صورت میں بچوں پر فروخت کے لئے سپلائی کیا جاتا تھا۔  فوڈ سیفٹی اتھارٹی کے مطابق جوس میں شکرین اور دیگر مضر صحت کیمکلز کا استعمال کیا جارہا تھا، اور انسپکشن کے دوران یونٹ میں صفائی کی صورتحال بھی نہایت ابتر پائی گئی۔ جوس تیار کرنے والے یونٹ کو گھر کے اندر قائم کیا گیا تھا۔ ڈی جی فوڈ سیفٹی اتھارٹی شاہ رخ علی خان کا کہنا تھا کہ وزیر خوراک عاطف خان اور سیکرٹری محکمہ خوراک کیپٹن ریٹائرڈ مشتاق احمد کی ہدایت پر دیگر اشیا خوردونوش کے ساتھ بچوں کے لئے تیار ہونے والے مشروبات، چپس اور دیگر اشیا کی چیکنگ کا عمل مزید تیز کردیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ شہریوں تک معیاری و محفوظ خوراک کی فراہمی کے لئے فوڈ سیفٹی اتھارٹی کی ٹیمز ملاوٹ مافیا کے خلاف سرگرم عمل ہے، عوام بھی ایسے عناصر کے خلاف فوڈ سیفٹی اتھارٹی کے ٹال فری نمبرز پر اپنی شکایات درج کرائیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -