مقبوضہ کشمیر، بھارتی پولیس نے پلوامہ سے 6کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کر لیا

  مقبوضہ کشمیر، بھارتی پولیس نے پلوامہ سے 6کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کر لیا

  

      ملتان(مانیٹرنگ ڈیسک)کل جماعتی حریت کانفرنس نے کشمیریوں کی اپنے منصفانہ حق خودارادیت کے حصول کی جدوجہد کو دبانے کیلئے مودی کی فسطائی بھارتی حکومت کی طرف سے غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ پورے جموں و کشمیر میں ریاستی دہشت گردی کی کارروائیوں میں تیزی پر شدید تشویش ظاہر کی کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان نے سرینگر سے جاری ایک(بقیہ نمبر45صفحہ7پر)

 بیان میں کہاکہ گزشتہ چند دنوں میں تلاشی اور محاصرے کی نام نہاد کارروائیوں کے دوران سرینگر، گاندربل، پلوامہ اور کپواڑہ کے علاقوں میں گیارہ نوجوان کے قتل اور درجنوں کی گرفتاری ظالمانہ بھارتی سامراجیت کا بدترین اظہار ہے۔ انہوں نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس سے اپیل کی کہ وہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوجیوں کی طرف سے بڑے پیمانے پر قتل عام، غیر قانونی نظربندیوں اور انسانی حقوق کی دیگر پامالیوں کا سخت نوٹس لیں اور تنازعہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی متعلقہ قراردادوں کے مطابق حل کرانے کیلئے اقدامات کریں۔ ادھر بھارتی پولیس نے ضلع پلوامہ میں کاک پورہ، پامپورہ اور دیگر علاقوں میں گھروں پر چھاپے مار کرمزید  6 کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کرلیا۔ بھارتی فوجیوں اور پیراملٹری اہلکاروں نے سرینگر، بارہمولہ، بانڈی پورہ، گاندربل، پلوامہ، اسلام آباد، شوپیاں اور کولگام کے اضلاع کے مختلف علاقوں میں اپنی تلاشی اور محاصرے کی کارروائیاں جاری رکھیں اور لوگوں کو خوف و ہراس کا نشانہ بنایا۔ نیشنل کانفرنس کے وائس چیئرمین عمر عبداللہ نے ضلع کولگام میں ایک ریلی کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے متنازعہ فلم دی کشمیر فائلز کو من گھڑت کہانی پر مبنی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ فلم میں بہت سارا جھوٹ دکھایاگیا ہے ایک ویبینار میں مقررین نے مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کے کارکنوں کے خلاف انتقامی کارروائیوں کے بڑھتے ہوئے واقعات پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا  ”انسانی حقوق کے محافظوں کے خلاف انتقامی کارروائی“ کے عنوان سے ویبینار کا اہتمام کشمیر انسٹیٹیوٹ آف  انٹرنیشنل ریلیشنز نے ورلڈمسلم کانفرنس کے تعاون سے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے49ویں اجلاس کے موقع پر کیا تھا جس میں دنیا بھر سے انسانی حقوق کے ممتاز کارکنوں، بین الاقوامی قانون کے ماہرین اور ماہرین تعلیم نے شرکت اور خطاب کیا۔دریں اثناء بھارت میں متنازعہ فلم”دی کشمیر فائلز“ کی نمائش کرنے والے سنیما گھرہندو جنونیت  کے مرکز بن چکے ہیں جہاں ہندوتوا کے غنڈوں اور سماج دشمن عناصر کو مسلمانوں سے اپنی شدید نفرت کااظہار کرنے کی کھلی چھٹی حاصل ہے۔

کشمیر گرفتار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -