سکولوں کی نجکاری کیخلاف اساتذہ تنظیم کا پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنے کا اعلان

سکولوں کی نجکاری کیخلاف اساتذہ تنظیم کا پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنے کا اعلان

لاہور( خبرنگار) صوبے بھر کے اساتذہ نے سرکاری سکولوں کی نجکاری کے خلاف 3 جون کو پنجاب اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ یہ اعلانات گزشتہ روز پنجاب ٹیچرز یونین ( قیصر گروپ) کے مرکزی صدر اللہ بخش قیصر ، چودھری تاج حیدر، اللہ رکھا گجر، رؤف احمد پیرزادہ اور دیگر نے لاہور اور پاکپتن میں اساتذہ سے خطاب کے دوران کیا ہے۔ اس سے قبل اللہ بخش قیصر نے پنجاب ٹیچر زیونین پاکپتن کے رہنماؤں سے ملاقات کی اور پنجاب میں اساتذہ میں پائی جانیوالی بے چینی بارے اساتذہ سے خطاب کیا ۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ پڑھو پنجاب بڑھو پنجاب کے نعرے کی نفی کی جارہی ہے ایک طرف وزیر اعلی پنجاب کہتے ہیں یونیورسل پرائمری اور سیکنڈری ایجوکیشن میرا خواب ہے دوسری طرف بچوں کے نظام تعلیم کو ٹھیکیداروں اور این جی اوز کے حوالے کر کے روشنیوں کو اندھیروں میں تبدیل کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ جو حکومت محکمہ تعلیم کو چلانے میں ناکام ہو چکی ہے وہ نظام سلطنت کس طرح چلائے گی ۔اس موقع پر ملک لطیف شہزادمرکزی صدر ، رانا عبدالستار، چوہدری طاہر رشید گجر ، محمد افضل بھٹی، مجاہد علی خان ، جمشید علی خان ، محمد رمضان بھٹی ، میاں خدا بخش، احسان الحق راجپوت، میاں پرویز اخترکمیانہ، چوہدری محمد طاہر ، شوکت علی ، محمد تنویر ، امانت علی ، رانا غلام حسین ، بھی موجود تھے ۔

اساتذہ دھرنا

مزید : صفحہ آخر


loading...