سٹاک مارکیٹ پھر مندی کا شکار، انڈیکس میں 203.36پوائنٹس کمی، ڈالر 50پیسے مہنگا

      سٹاک مارکیٹ پھر مندی کا شکار، انڈیکس میں 203.36پوائنٹس کمی، ڈالر 50پیسے ...

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں کاروباری ہفتے کے پہلے روزاتار چڑھاوٗ کے بعد مندی چھاگئی جس کے باعث کے ایس ای 100انڈیکس34ہزار کی نفسیاتی حدگرگئی اور انڈیکس 203.36پوائنٹس کی کمی سے 33804 پوائنٹس کی سطح پر آ گیا جب کہ 53.48 فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی لیکن مہنگے شیئرز کی قیمتوں میں اضافے کے سبب مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت 48 ارب 5 کروڑ 34لاکھ روپے بڑھ گئی تاہم کاروباری حجم جمعرات کی نسبت22.82فیصد زائد رہا۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیر کو کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا جس کے باعث کے ایس ای100انڈیکس 34394پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا تاہم بعد ازاں مختصر مدتی سرمایہ کاروں کی جانب سے منافع کے حصول کی عرض سے حصص فروخت کا رجحان شروع ہوا جس کے نتیجے میں تیزی کے اثرات زائل ہوگئے اور مارکیٹ میں مندی چھاگئی جس کی وجہ سے33762پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیا بعد میں معمولی ریکوری آئی لیکن مندی کا رجحان غالب رہا اورمارکیٹ کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس 203.36پوائنٹس کی کمی سے 33804پوائنٹس پر بند ہوا۔ اسی طرح 103.80پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای30انڈیکس 103.80پوائنٹس کی کمی سے 14799.86پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس37.45پوائنٹس کی کمی سے 24245.47پوائنٹس ہو گیا۔گزشتہ روز مجموعی طور پر 344کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 143کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،184میں کمی اور 17 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ مندی کے باجود مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت64کھرب 29ارب34کروڑ73لاکھ 58ہزار شیئرز سے بڑھ کر64کھرب 38ارب 44کروڑ85لاکھ 97ہزار شیئرزہو گیا۔پیر کوحصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم 26کروڑ19لاکھ 66ہزار شیئرز رہا جو جمعہ کے مقابلے میں 4کروڑ86لاکھ 81ہزار شیئرز زائد ہے۔قیمتوں میں اتار چڑھا کے اعتبار سے رفحان میظ کے حصص کی قیمت 250روپے کے اضافے سے7399 روپے ہوگئی اسی طرح نیسلے پاکستان 243.75روپے کے اضافے سے 6933.75روپے پر جا پہنچی جبکہ پاک سروسز کے حصص کی قیمت 72.45روپے کی کمی سے893.64 روپے اورسیپ ہائر ٹیکس کے حصص کی قیمت 69.21روپے کی کمی سے 853.74روپے پر آ گئی۔نمایاں کاروباری سرگرمیوں کے لحاظ سے ٹی آر جی پاکستان،کے الیکٹرک،ورلڈ کال ٹیلی کام،میپل لیف،آئی ایس ٹی کیپٹل، ہیسکول پٹرول،یونٹی فوڈز،جہانگیر صدیقی کمپنی،پاک الیکٹران اورہم نیٹ ورک کے حصص سرفہرست رہے۔مقامی کرنسی مارکیٹوں میں پیر کو روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر بڑھنے کا رجحان دیکھنے میں آیا جس کے باعث انٹر بینک میں ڈالر کی قدر میں 35پیسے اور اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں 50پیسے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جب کہ سعودی ریال،یوے ای درہم، برطانوی پاونڈ کی قدر میں کمی اور یورو کی قدر مستحکم رہی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق گزشتہ روز انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قیمت خرید35پیسے کے اضافے سے159.95روپے سے بڑھ کر160.30روپے اور قیمت فروخت 25پیسے کے اضافے سے160.25روپے سے بڑھ کر160.50روپے ہو گئی اسی طرح مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں 159.50روپے سے بڑھ کر160روپے اور قیمت فروخت160روپے سے بڑھ کر160.50روپے ہوگئی۔دیگر کرنسیوں میں یورو کی قیمت خرید170.50روپے اور قیمت فروخت172.50روپے مستحکم رہی جب کہ برطانوی پاؤنڈ کی قیمت خرید196روپے سے گھٹ کر194روپے اور قیمت فروخت198روپے سے گھٹ کر196روپے ہو گئی۔اسی طرح سعودی ریال کی قیمت خرید 41.60روپے سے گھٹ کر41.50روپے اور قیمت فروخت 42.10روپے سے گھٹ کر42روپے ہوگئی جب کہ یو اے ای درہم کی قیمت خرید 42.70روپے سے گھٹ کر42.50روپے اور قیمت فروخت 43.20روپے سے گھٹ کر43روپے ہوگئی۔لمی مارکیٹ میں سونے کی قیمت میں غیر معمولی اضافے کے باعث مقامی طور پر بھی سونے کی فی تولہ قیمت2ہزارروپے کے اضافے سے 97ہزار روپے کی بلند سطح پر پہنچ گئی۔آل کراچی صراف اینڈ جیولرز ایسوسی ایشن کے مطابق پیر کو عالمی مارکیٹ میں سونے کی فی اونس قیمت 43ڈالر کے اضافے سے 1762ڈالر ہوگئی جس کے زیر اثر مقامی طور پر سونے کی فی تولہ قیمت 200روپے کے اضافے سے 97ہزار روپے اور 10گرام سونے کی قیمت 1715روپے کے اضافے سے 83162روپے ہوگئی جب کہ چاندی کی فی تولہ قیمت 50روپے کے اضافے سے1ہزار50 روپے ہوگئی۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ آخر -