میڈیکل اور ڈینٹل کالجز کے سپلیمنٹری امتحانات جون میں کروانے کا فیصلہ

  میڈیکل اور ڈینٹل کالجز کے سپلیمنٹری امتحانات جون میں کروانے کا فیصلہ

  

لاہور (جنرل رپورٹر) میڈیکل اور ڈینٹل کالجوں کے طلبہ کو امتحانات کے بغیر اگلی کلاسز میں پروموٹ نہیں کیا جائے گا۔ کورونا کے باعث ملتوی کیے گئے سپلیمنٹری امتحانات عید الفطر کے فوراً بعد جون میں شروع ہوں گے۔یہ اعلان گزشتہ روز یونیورسٹی آ ف ہیلتھ سائنسز میں صوبے کی سرکاری اور نجی میڈیکل یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز کے اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس کی سربراہی وی سی یو ایچ ایس پروفیسر جاوید اکرم نے کی۔ انٹر میڈیکل یونیورسٹی بورڈ کے جلاس میں وی سی کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر خالد مسعود گوندل، وی سی فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر عامر زمان خان، وی سی فیصل آباد میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ظفر علی چودھری، ریکٹر سپیرئیر یونیورسٹی ڈاکٹر سمیرا رحمن، پرو ریکٹر یونیورسٹی آف لاہور پروفیسر شاہد محمود ملک، پرو وی سی کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر اعجاز حسین، پرنسپل سروسز انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز پروفیسر محمود ایاز، رجسٹرار یو ایچ ایس ڈاکٹر اسد ظہیر، کنٹرولر امتحانات یو ایچ ایس ڈاکٹر ثاقب محمود کے علاوہ ویڈیو لنک کے ذریعے وی سی راولپنڈی میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر محمد عمر اور پرنسپل آزاد جموں کشمیر میڈیکل کالج مظفر آباد پروفیسر سروش ماجد نے شرکت کی۔ اجلاس میں کورونا کے تناظر میں میڈیکل امتحانات اور آن لائن کلاسز کے حوالے سے یکساں پالیسی مرتب کرنے کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں متفقہ طورپر فیصلہ کیا گیا کہ میڈیکل کالجوں کے طلبہ کو بغیر امتحانات اگلی کلاسز میں پروموٹ نہیں کیا جائے گا اور نہ ہی طلبہ کو رعائتی نمبر دے کر پاس کیا جائے گا۔پروفیسر جاوید اکرم نے کہا کہ بغیر امتحانات طلبہ کو اگلی کلاسز میں بھیجنے سے میڈیکل ایجوکیشن کے معیار کو ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا۔ عید کے بعد ملتوی کیے گئے امتحانات سماجی دوری کے اصولوں کے مطابق لیں گے۔ اجلاس میں اس بات کا فیصلہ بھی کیا گیا کہ میڈیکل اور ڈینٹل کالجوں کا جاری اکیڈمک سیشن وقت پر ختم کیا جائے گا۔سیشن آگے نہیں لے جایا جائے گا۔ سیشن 2019-20کے امتحانات اس سال اکتوبر میں شروع ہوجائیں گے۔ میڈیکل یونیورسٹیوں کی جانب سے ایف ایس سی کے امتحانات اور ایم ڈی کیٹ کروانے کی بھی حمایت کی گئی۔پروفیسر جاوید اکرم نے کہا کہ اس حوالے سے پی ایم ڈی سی اور وفاقی حکومت کو تجاویز پیش کریں گے۔ گورنر پنجاب سے بھی درخواست کریں گے کہ یہ اہم معاملہ ہے، تمام سٹیک ہولڈرز کا اجلاس طلب کریں۔ انھوں نے مزید کہا کہ میڈیکل انٹری ٹیسٹ ستمبر کے آخر تک لیا جاسکتا ہے۔

میڈیکل امتحان

مزید :

صفحہ آخر -