بارشیں‘برف پگھلنے سے دریاؤں میں طغیانی‘سیلاب کا خدشہ

  بارشیں‘برف پگھلنے سے دریاؤں میں طغیانی‘سیلاب کا خدشہ

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر) شمالی علاقہ جات وملک کے دیگر حصوں میں بارشوں اور پہاڑوں پر برف کے پگھلنے کا عمل شروع ہونے کے باعث ملکی دریاؤں میں شدید طغیانی اوردریاؤں اور بیراجوں پر پانی کے بہاؤ میں اضافہ شروع ہو گیا،تربیلا، منگلا اور چشمہ کے آبی ذخائر میں پانی کی آمد و اخراج، ان کی سطح اور بیراجوں میں پانی کے بہا کی صورت حال حسب ذیل رہی،دریاؤں میں سندھ میں تربیلاکے مقام پرآمد 56800کیوسک اور اخرج 75000کیوسک، کابل(بقیہ نمبر30صفحہ6پر)

میں نوشہرہ کے مقام پرآمد 53500کیوسک اور اخراج 53500کیوسک، جہلم میں منگلاکے مقام پرآمد60500کیوسک اور اخراج50000 کیوسک، چناب مرالہ کے مقام پر آمد30500کیوسک اور اخراج14500 کیوسک۔بیراجوں میں جناح آمد138300 کیوسک اور اخراج13130کیوسک،چشمہ آمد142900کیوسک اوراخراج 136000 کیوسک، تونسہ آمد134100 کیوسک اور اخراج112700 کیوسک، پنجند آمد21900 کیوسک، اور اخراج 7900 کیوسک،گدو آمد 96300کیوسک اور اخراج 83800 کیوسک، سکھرآمد64300کیوسک اور اخراج 25800 کیوسک، کوٹری آمد13600 کیوسک اور اخراج صفر کیوسک۔تربیلاکا کم از کم آپریٹنگ لیول 1392 فٹ،ریزروائر میں پانی کی موجودہ سطح1460.90 فٹ،ریزروائر میں پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 1550فٹ اورقابلِ استعمال پانی کا ذخیرہ 1.640 ملین ایکڑ فٹ۔منگلاکا کم از کم آپریٹنگ لیول 1050فٹ،ریزروائر میں پانی کی موجودہ سطح 1215.90 فٹ،ریزروائر میں پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 1242فٹ اورقابلِ استعمال پانی کا ذخیرہ 5.395 ملین ایکڑ فٹ۔ چشمہ کا کم از کم آپریٹنگ لیول 638.15فٹ،ریزروائر میں پانی کی موجودہ سطح 643.90 فٹ،ریزروائر میں پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 649 فٹ اور قابلِ استعمال پانی کا ذخیرہ 0.098 ملین ایکڑ فٹ۔تربیلا، جناح اور چشمہ کے مقامات پر دریائے سندھ، نوشہرہ کے مقام پر دریائے کابل اور منگلا کے مقام پر دریائے جہلم میں پانی کی آمد اور اخراج 24گھنٹے کے اوسط بہا کی صورت میں ہے۔

طغیانی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -