سندھ حکومت کے فیصلوں میں بڑا تضاد ہے،آپ نے سب رجسٹرارآفس کھول دیا،بڑی کرپشن کاادارہ سب رجسٹرار آفس ہے،چیف جسٹس پاکستان

سندھ حکومت کے فیصلوں میں بڑا تضاد ہے،آپ نے سب رجسٹرارآفس کھول دیا،بڑی کرپشن ...
سندھ حکومت کے فیصلوں میں بڑا تضاد ہے،آپ نے سب رجسٹرارآفس کھول دیا،بڑی کرپشن کاادارہ سب رجسٹرار آفس ہے،چیف جسٹس پاکستان

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا ازخودنوٹس کیس میں سپریم کورٹ نے کہاکہ سندھ حکومت کے فیصلوں میں بڑاتضادہے،سرکاری دفاترکھول کرنجی ادارے بندکررہے ہیں، آپ نے سب رجسٹرارآفس کھول دیا،بڑی کرپشن کاادارہ سب رجسٹرار آفس ہے،کرپشن کی تمام میٹنگ سب رجسٹرار آفس میں ہوتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں کوروناوائرس ازخودنوٹس کی سماعت ہوئی،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں 5 رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی،چیئرمین این ڈی ایم اے جنرل افضل عدالت کے سامنے پیش ہوئے،ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے کہاکہ لاک ڈاﺅن پہلے جیساموثر نہیں رہا،بیوٹی سیلون اورحجام کی دکانیں کھل رہی ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ یہ ہماری وجہ سے نہیں کھل رہیں آپ کے انسپکٹر پیسے لے کر اجازت دے رہے ہیں عدالت نے سندھ حکومت کو کچھ نہیں کہا،سندھ حکومت نے تمام سرکاری دفاتر کھول دیئے، آپ نے سب رجسٹرارآفس کھول دیا،چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ بڑی کرپشن کاادارہ سب رجسٹرار آفس ہے،کرپشن کی تمام میٹنگ سب رجسٹرار آفس میں ہوتی ہے،پبلک سروس کے نہیں بلکہ سرکاری دفاتر کھولے ہیں ۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ سرکاری دفاترکھول کرنجی ادارے بندکررہے ہیں،سندھ حکومت کے فیصلوں میں بڑاتضادہے،ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے کہاکہ وفاقی حکومت طبی ماہرین کی رائے کے برخلاف جارہی ہے،عدالت ہماری گزارشات بھی سن لے،عدالت ماہرین کی کمیٹی بناکررپورٹ طلب کرلے،لاک ڈاون ختم ہوگیا،اس کانتیجہ کیاہوگا؟۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ ہفتہ اتوارکوکاروبارکھولنے کاحکم صرف عیدتک ہے،ہماری پورے پاکستان پرنظرہے،آنکھ،کان اورمنہ بندنہیں کرسکتے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -