شہد کی مکھیاں پالنا منافع بخش کاروبار ہے،ماہر نیشنل ایگریکلچرل کونسل

شہد کی مکھیاں پالنا منافع بخش کاروبار ہے،ماہر نیشنل ایگریکلچرل کونسل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(آئی این پی)شہد کی مکھیاں پالنا پاکستان کے دیہی علاقوں میں ایک تبدیلی کی قوت کے طور پر ابھر سکتا ہے، جو معاشی ترقی اور کمیونٹی کی ترقی کے بے پناہ امکانات کو کھولتا ہے۔شہد کی مکھیاں پالنا اور شہد کی فارمنگ زرعی پروسیسنگ انڈسٹری میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔ وہ نہ صرف دیہی علاقوں میں آمدنی اور ملازمت کے مواقع پیدا کرتے ہیں بلکہ پولنیشن کے ذریعے فصلوں کی پیداوار میں اضافہ کرکے غذائی تحفظ میں بھی حصہ ڈالتے ہیں۔

نیشنل ایگریکلچرل ریسرچ کونسل کے ہنی بی ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے ایک ماہر نے کہاکہ شہد بے شمار صحت کے فوائد کی وجہ سے زیادہ مقبول ہوا ہے۔ شہد کی عالمی منڈی کی مالیت تقریبا 7.84 بلین ڈالر ہے، اور شہد کی برآمدات کی مقدار گزشتہ 10 سالوں میں 35 فیصد بڑھ کر 2.3 بلین ڈالر تک پہنچ گئی ہے۔

مزید :

کامرس -