ریونیو آفیسرجلو اور پٹواری میں تنازعہ شدت اختیار کر گیا

 ریونیو آفیسرجلو اور پٹواری میں تنازعہ شدت اختیار کر گیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(اپنے نمائندے سے)پراپرٹی کے انتقالات کی منظوری کیلئے رشوت کے لین دین کا تنازعہ شدت اختیار کر گیا، ریونیو آفیسر کی دھمکیوں اور دباؤ سے پٹواری کو ہارٹ اٹیک آگیا۔پٹواری ملک تاج نے رشوت وصولی، کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال پر ریونیو آفیسرجلو کے خلاف کمشنر لاہور سے نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔تفصیلات کے مطابق نجی ہسپتال میں زیر علاج پٹواری ملک تاج کے مطابق ریونیو آفیسر علی رضا نے دورہ پروگرام کیلئے قبل ازیں 80 ہزار روپے رشوت وصولی کی تاہم ریونیو آفیسرمزید ایک لاکھ روپے کی ڈیمانڈ کرنے لگا اور ڈیمانڈ پوری نہ کرنے پر ریکاڑ واپس کرنے سے انکارکردیا۔ اگر مجھے کچھ ہوا تو اس کا ذمہ دار ریونیو آفیسر علی رضا ہوگایہی نہیں بلکہ پٹواری ملک تاج نے اپنے ورثا کو ریونیو آفیسرکی کرپشن کے حوالے سے بیان بھی دے دیا۔پٹواری نے یونیو آفیسر جلو کے خلاف ضابطہ کے مطابق سخت کارروائی کا بھی مطالبہ کیا ہے۔ریونیو آفسیر علی رضا  کا کہنا تھا کہ الزمات بے بنیادہیں، ریکوری نہ ہونے کے باعث جب سختی کی  تو مجھ پر سنگین الزامات لگا دئیے۔ کمشنر لاہور اور ڈپٹی کمشنر لاہور کو جواب دہ میں ہوں کوئی اور نہیں اس لیے یہ میرے طریقہ کار سے ہی کام کریں گے۔