عمران خان اور بشریٰ بی بی کیخلاف توشہ خانہ کا نیا کیس

عمران خان اور بشریٰ بی بی کیخلاف توشہ خانہ کا نیا کیس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                            اسلام آباد(آئی این پی)بانی پی ٹی آئی اور ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کیخلاف توشہ خانہ کا نیا کیس سامنے آ گیا، انکوائری رپورٹ میں ایک نہیں، 7 گھڑیاں خلاف قانون لینے اور بیچنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔میڈیارپورٹ کے مطابق قومی احتساب بیو رو(نیب)اب بانی پی ٹی آئی عمران خان اور ان کی اہلیہ بشری بی بی کیخلاف ایک نہیں بلکہ7قیمتی گھڑیوں، ہیرے اور سونے کے زیورات سمیت 10قیمتی تحائف خلاف قانون پاس رکھنے اور بیچنے کی تحقیقات کریگا۔انکوائری رپورٹ کے مطابق نیا کیس 10قیمتی تحائف خلاف قانون پا س رکھنے اور بیچنے سے متعلق ہے، گراف واچ، رولیکس گھڑیاں، ہیرے اور سونے کے سیٹ کیس کا حصہ ہے۔رپورٹ کے مطابق تحفے قانون کے مطابق اپنی ملکیت میں لئے بغیر ہی بیچے جاتے رہے، گراف واچ کا قیمتی سیٹ بھی "ریٹین" کئے بغیر ہی بیچ دیا گیا، نجی تخمینہ ساز کی ملی بھگت سے گراف واچ کے خریدار کو فائدہ پہنچایا گیا۔ تخمینہ ساز کا توشہ خانہ سے ای میل آنے سے پہلے ہی گھڑی کی قیمت 3کروڑ کم لگانا ملی بھگت کا ثبوت ہے۔انکوائری رپورٹ کے مطابق گراف واچ کی قیمت10کروڑ 9لاکھ 20ہزار روپے لگائی گئی، 20 فیصد رقم، 2کروڑ ایک لاکھ 78ہزار روپے سرکاری خزانے کو دیئے گئے جبکہ ہر تحفے کو پہلے رپورٹ کرنا اور توشہ خانہ میں جمع کروانا لازم ہے، صرف 30 ہزار روپے تک کی ما لیت کے تحائف مفت اپنے پاس رکھے جا سکتے ہیں۔

نیا کیس

مزید :

صفحہ اول -