ایک ہزار سے زائد طلبہ ہاسٹل میں محصور، پاکستانی طالبعلم

  ایک ہزار سے زائد طلبہ ہاسٹل میں محصور، پاکستانی طالبعلم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(آن لائن)کرغزستان میں پھنسے پاکستانی طالبعلم نے انکشاف کیا ہے کہ طلباء ہاسٹل میں مسلسل قید ہوکررہ گئے ہیں،طالبات کو ہراساں کیا جارہا ہے،یہاں کوئی پاکستانی محفوظ نہیں، سفارتخانہ مثبت اقدامات نہیں اٹھا رہا۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے مردان سے تعلق رکھنے والے طالبعلم طلحہ احمد نے کہا کہ کرغزستان میں پاکستانیوں کو خاص ٹارگٹ بنا کر مارا جارہا ہے کوئی پاکستانی محفوظ نہیں  جان سے مارنے کیلئے بار بار ہاسٹل پر حملے کئے جارہے ہیں طالبات کو ہراساں کیا جارہا ہے ہاسٹل میں قید ہوکررہ گئے ہیں۔ طالبعلم نے کہا کہ پاکستانی ہے، پاکستانی سفارتخانہ مدد نہیں کررہا، حکومت مددکرے ہماری حفاظت کو یقینی بنایا جائے واپسی کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں یہاں صورتحال بہت کشیدہ ہوگئی ہے۔ ایک اور طالبعلم رضوان نے بتایا کہ ابھی تک سفارتخانے کے حکام نے رابطہ نہیں کیا تقریباً 500کے قریب حملہ آوروں نے ہاسٹلز میں توڑ پھو ڑ کی بلوائیو نے طالبات کو بھی تشدد کانشانہ بنایا۔ مقامی لوگوں نے پاکستانی،بنگلہ دیشی اوردیگرغیرملکی طلبہ پرحملہ کیا، ایک ہزار سے زائد طلبہ ہاسٹل میں محصور ہیں۔

طلبہ محصور

مزید :

صفحہ اول -