قوم جعلی حکومتی دعوؤں سے تنگ، عملی اقدامات سے ہی ملکی ترقی ممکن، ذیشان اختر

قوم جعلی حکومتی دعوؤں سے تنگ، عملی اقدامات سے ہی ملکی ترقی ممکن، ذیشان اختر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بہاولپور(نمائندہ پاکستان) نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب وامیر ضلع سید ذیشان اختر نے ضلعی شوری اور ذمہ دران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جماعت اسلامی کے منشور میں ہے کہ ہم بے روزگاری، مہنگائی اور کرپشن کا خاتمہ کرتے ہوئے بیوروکریسی، پولیس، نظام عدل میں اصلاحات متعارف کرائیں گے انگریز کے دیئے گئے نظام،(بقیہ نمبر9صفحہ7پر)

 موجودہ وی آئی پی کلچر اور خاندانوں کی پارٹیوں سے خلاصی حاصل کیے بغیر ملک میں ترقی ممکن نہیں، قوم سابقہ حکمرانوں کے جعلی دعوؤں سے تنگ آچکی ہے، ان کے پاس کارکردگی دکھانے کو کچھ بھی نہیں، یہ حکمران اپنی کارکردگی بتائیں، ان کی وجہ سے ملک 80ہزار ارب کا مقروض ہے، سالانہ پانچ ہزار ارب کی کرپشن ہوتی ہے۔انھوں نے ملک پر آئی ایم ایف،ورلڈ بنک کی پالیسیاں مسلط کیں، مہنگائی اور بے روزگاری عام کی، عوام کیلئے سانس لینا بھی دشوار بنا دیا، ملک میں دکاندار، تاجر پریشان ہیں، کاروبار ختم ہوگیا، روپیہ اپنی قدر کھو چکا، معیشت بیٹھ گئی، ادارے کمزور ہوئے، پونے دوکروڑ بچے سکولوں سے باہر ہیں، نوجوان بے روزگار ہیں، عام پریشان حال، حکمران اشرافیہ، جاگیردار، وڈیرے مزے میں ہے۔، کرپٹ پارٹیاں کرپشن ختم کرسکتی ہیں نہ عوام کو ان کا حق دے سکتی ہیں۔ حکمران اشرافیہ کو اپنے خاندانوں اور اولادوں کے علاوہ کچھ نظر نہیں آتا، قوم کو اہل ایماندار قیادت چاہیے جو صرف جماعت اسلامی دے سکتی ہے اجلاس میں مختلف قراردادوں کے ذریعے ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی بے روزگاری کا قانونیت کی مذمّت کی گی۔لاہور میں کاشتکاروں کے احتجاج کے موقع پر جماعت اسلامی اور جے آئی کسان کیذمہ دران خصوصاً مرکزی چیئرمین جے آئی کسان جام حضور بخش لاڑ ملک مصطفیٰ چنڑ فیاض خان بلوچ اور مہر اسلم کی گرفتاری کی مذمّت کی گئی اور پنجاب بھر سے گرفتار افراد کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا گیا۔ اجلاس میں ضلعی جنرل سیکرٹری عرفان انجم نائب امراء عبد الجلیل ہاشمی قاری عبد الرحیم ربانی میڈیا کوآرڈینیٹر عارف عاصم تحصیل امراء نصر اللہ خان ناصر ملک عبدالحئی صلاح الدین ججہ عرفان اسلم چودھری طاہر لطیف ملک عبد الستار عبد الحفیظ بھٹی خالد بن جلیل سید وقاص شاہ اور دوسرے کئی ذمہ دران اور ارکان شوری نے شرکت