موت سے قبل مریضوں کے آخری 3 الفاظ عمومی طور پر کیا ہوتے ہیں؟ ایک نرس نے کہانی سنادی

موت سے قبل مریضوں کے آخری 3 الفاظ عمومی طور پر کیا ہوتے ہیں؟ ایک نرس نے کہانی ...
موت سے قبل مریضوں کے آخری 3 الفاظ عمومی طور پر کیا ہوتے ہیں؟ ایک نرس نے کہانی سنادی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ویب ڈیسک) انسان کے آخری وقت میں اس کے ساتھ کیا ہوتا ہے اور مریض آخری وقت میں کیا بول رہا ہوتا ہے، یہ تجسس اکثر سوشل میڈیا صارفین کو ہوتا ہے تاہم اب ایک نرس کی جانب سے ایسا ہی انکشاف کیا گیا ہے، جو کہ سوشل میڈیا صارفین سمیت سب کئی افراد کی توجہ حاصل کر رہا ہے۔

ڈیلی سٹار کی جانب سے پبلش کی گئی رپورٹ کے مطابق ٹک ٹاک سٹار اور نرس جولی کی جانب سے ٹک ٹاک ویڈیو میں انکشاف کیا گیا ہے۔1 اعشاریہ 5 ملین فالوورز والی ٹک ٹاکر اور نرس کی جانب سے موت کے منہ میں جانے والوں کے ساتھ اپنے تجربے کے بارے میں اظہار خیال کیا گیا ہے۔

ویڈیو میں نرس نے بتایا کہ انہوں نے اپنے مریضوں کو دیکھا جنہوں نے اپنے مرحوم پیاروں کو آخری وقت میں روح کی صورت میں دیکھا۔جولی نے انکشاف کیا کہ مریض کے مرحوم فیملی ممبران مریض کو اکثر جب دکھائی دیتے ہیں تو کہتے ہیں کہ ’وہ گھر آ رہے ہیں‘۔

جولی کے مطابق عام طور پر جو جملہ موت کے منہ میں جانے والے مریضوں کی جانب سے ادا کیا جاتا ہے وہ ہے ’آئی لوو یو‘ یا مریض آخری وقت میں اپنے والدین کو یاد کر رہا ہوتا ہے جو کہ پہلے ہی انتقال کر گئے ہوتے ہیں جبکہ موت کی علامتیں بھی جولی کی جانب سے بتائی گئی ہیں، نرس کے مطابق قدرتی بیماری کے باعث انتقال کر جانے والے مریضوں کو سانس لینے میں مشکل، جلد کے رنگ میں تبدیلی، پہچاننے کی صلاحیت کم ہو جانا، بخار جیسی شکایت کا سامنا ہوتا ہے۔

موت سے چند دن اور چند گھنٹوں قبل تک مریض کو سانس لینے کا طریقہ کار بھی تبدیل ہو جاتا ہے، اس کا یہ انداز دوسرے لوگوں کو بھی باقاعدہ محسوس ہو رہا ہوتا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -