ترکی :وزیراعظم کا عہدہ ختم کرنے کا منصوبہ زیر غور

ترکی :وزیراعظم کا عہدہ ختم کرنے کا منصوبہ زیر غور
ترکی :وزیراعظم کا عہدہ ختم کرنے کا منصوبہ زیر غور

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

استنبول(ویب ڈیسک ) ترکی میں ایک نیا نظام متعارف کروانے پر غور کیا جارہا ہے ، جس میں وزیراعظم کا عہدہ نہیں ہوگا۔ ترکی کی سرکاری خبر رساں ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر جنگلات فیسیل ایروغلو نے بتایاکہ نئے نظام کے تحت ایک یا دو نائب صدور ہوں گے جو صدر کے ماتحت کام کریں گے۔

ایروغلو کے مطابق نئے نظام میں وزیراعظم کا عہدہ نہیں ہوگا بلکہ ایک صدر ہوگا اور ان کے بعد نائب صدر، جس طرح امریکہ میں ہوتا ہے ، ہوسکتا ہے ہمارے پاس ایک سے زائد نائب صدر ہوں۔صدر رجب طیب اردوان کی پارٹی کو مذکورہ نظام کیلئے ریفرنڈم کرانے کے سلسلے میں 550 سیٹوں پر مشتمل پارلیمنٹ میں کم ازکم 330 ووٹوں کی ضرورت ہوگی۔فیسیل ایروغلو نے پیشگوئی کی کہ مجوزہ اصلاحاتی نظام اگلے برس بہار تک ریفرنڈم کیلئے پیش کردیا جائے گا اور اس سلسلے میں اپوزیشن ارکان اسمبلی کی بھی حمایت حاصل ہوگی۔

مکار دشمن کی ایک اور چال ناکام، پاک بحریہ نے ملکی حدود میں گھسنے کی کوشش کرنیوالی بھارتی آبدوز کو مار بھگایا، کسی بھی جارحیت کا بھرپور جواب دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں: ترجمان

ایروغلو نے مزید بتایاکہ نئے نظام کے تحت کابینہ وزرا بھی ارکان اسمبلی نہیں رہیں گے ،ایسا سسٹم لایا جارہا ہے جہاں قانون سازی اور انتظام الگ الگ چلایا جائے گا۔انکا مزید کہنا تھا کہ نئے نظام کے تحت صدر اردوان اپنی پارٹی کے ساتھ منسلک رہ سکیں گے ، جو صدارت سنبھالنے کے بعد پارٹی سے الگ ہوگئے تھے۔ناقدین کاکہنا تھا نئے نظام کے تحت اردوان 2029 تک اقتدار میں رہ سکیں گے۔

مزید : بین الاقوامی