میو ہسپتال ، ہرتالی ڈاکٹروں ، نرسوں کو معاف کرنیکی تیاریاں

میو ہسپتال ، ہرتالی ڈاکٹروں ، نرسوں کو معاف کرنیکی تیاریاں

لاہور(جاوید اقبال) میو ہسپتال کو 20روز تک میدان جنگ بنانے والے یونین بازوں ڈاکٹروں اور نرسوں کو معاف کرنے کے لئے پلان تیار کر لیا گیا ہے جس کے لئے محکمہ صحت نے خود کو بچانے کے لئے کیس کی تحقیقات کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کی اکیڈمک کونسل کے سپرد کر دی ہیں کونسل نے معاملہ رفع دفع کر کے میو ہسپتال سے نکالے گئے وائی ڈی اے کے صدر ڈاکٹر شہریار خان نیازی ،چیئر مین ڈاکٹر وقاص اور منان ٹوانہ کے خلاف کارروائی واپس لینے کی یقین دہانی کرادی ہے جس کے بعد میو ہسپتال بدر کئے گئے دیگر رہنماؤں نرسوں کی سزا بھی معاف کرتے ہوئے انہیں واپس لایا جائے گا ۔ذرائع نے بتایا کہ وائی ڈی اے میو ہسپتال کے صدر چیئر مین اور جنرل سیکرٹری سمیت 22ڈاکٹروں ،نرسوں کو میو ہسپتال بدر کر دیا گیا تھاجن میں بڑے یونین بازوں ڈاکٹر شہریار نیازی ،وقاص اور منان کی پوسٹ گریجویشن ٹریننگ ایک سال کے لئے معطل کر دی گئی تھی اور ان کے آئندہ میو ہسپتال میں دالے پر پابندی عائد کر دی تھی ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ محکمہ صحت وائی ڈی اے کے دباؤ میں آ گیا ہے ۔اور اب محکمہ صحت نے خود کو اس لڑائی سے باہر کر لیا ہے اور کیس کی تحقیقات کر کے فیصلے کا اختیار کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کی اکیڈمک کونسل کو سونپ دیا ہے۔ذرائع نے بتایا ہے کہ اکیڈمک کونسل نے ابتدائی تحقیقات مکمل کرنا شروع کر دی ہیں اس بات کا قوی امکان ہے کہ کونسل جن ڈاکٹروں کے خلاف کارروائی کرے گی وہ کارروائی واپس لینے کے لئے تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں ۔آغاز میں ڈاکٹر شہریار خان ،ڈاکٹر ٹوانہ اور وقاص کے خلاف کارروائی واپس لی جائے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1