ٹرمپ نے انتخابی مہم کے دوران اسلام دشمنی کی بنا پر ووٹ حاصل کئے:حافظ سعید

ٹرمپ نے انتخابی مہم کے دوران اسلام دشمنی کی بنا پر ووٹ حاصل کئے:حافظ سعید

لاہور(خبر نگار خصوصی) امیر جماعۃالدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ طیب اردوان کی داعش کو مغرب کی طرف سے مددا وراسلحہ فراہم کرنے کی بات درست ہے۔ مسلم ملکوں کو کمزورکرنے کیلئے منظم منصوبہ بندی کے تحت اس فتنہ کو پروان چڑھایا گیا۔انسانوں کا قتل کر کے ان کی ویڈیوز بنا کر لوگوں کو اسلام کیخلاف بھڑکایاجارہا ہے۔ ٹرمپ نے انتخابی مہم کے دوران اسلام دشمنی کی بنا پر ووٹ حاصل کئے۔ پاکستانی حکمران شاہ سلمان اور طیب اردوان کی طرح جرأت پیدا کریں اور مسلم ملکوں کو متحد کر کے دشمنان اسلام کی سازشوں کو بے نقاب کریں۔ جامع مسجد القادسیہ میں خطبہ جمعہ کے دوران انہوں نے کہاکہ ترک صدر رجب طیب اردوان نے پاکستانی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں بہت اچھا خطاب کیا ہے۔ مغرب نے ترکی میں اتاترک کو کھڑ اکرکے وہاں لادینیت کو پروان چڑھایا۔عورتوں کے پردہ ، مردوں کے داڑھی رکھنے اور دیگر اسلامی شعائر کاخاتمہ کروایا کیونکہ وہ عثمانی ترکوں سے بہت خائف ہیں اور انہیں اس بات کا سخت خوف ہے کہ اگر ترک اسلام کی بنیاد پر کھڑے ہو گئے توپھر مغرب نہیں بچے گا۔ یہی وجہ ہے کہ انہوں نے جنگ عظیم اول اور دوم لڑ کرترکی کی اسلامی حیثیت ختم کرنے کی کوشش کی اور اسے یورپ کا کلچر دیا۔ انہوں نے کہاکہ آج ترکی میں بہت بڑی تبدیلی آرہی ہے۔ طیب اردوان نے اقتدار میں آکر اعلان کیا کہ ہر بچہ قرآن پڑھے گا۔ اسی طرح جو عورت پردہ کرنا چاہے یا کوئی مرد داڑھی رکھنا چاہے تو اس کیلئے کوئی پابندی نہیں ہے۔ان چیزوں سے مغرب بہت پریشان ہے یہی وجہ ہے کہ وہاں بغاوتیں کھڑی کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ترک صدر نے پاکستانی پارلیمنٹ میں مظلوم کشمیریوں کے حق میں زبردست آواز بلند کی اور مسلمانوں کے مابین اتحادویکجہتی کی بات کی۔یہ جرأتیں اسلام پیدا کر رہا ہے۔ جس مسلم حکمران میں جرأت نہ ہو وہ اسی طرح ببانگ دہل مسلمانوں کے حق میں اور کفار کی ریشہ دوانیوں کیخلاف آواز بلند نہیں کر سکتا۔ سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز بھی اسی طرح جرأت و استقامت کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ امریکی صدر اوبامہ کے ایئرپورٹ پہنچنے پر اذان کی آواز بلند ہوئی توشاہ سلمان سب سے پہلے نماز کیلئے مسجد چلے گئے۔ ایسے حکمران ہی دنیا میں تبدیلیاں پید اکر سکتے ہیں۔پاکستانی حکمرانوں کو بھی ایسا ہی جرأتمندی والا انداز اختیار کرنا چاہیے۔ حافظ محمد سعید نے کہاکہ ترک صدر پاکستانی پارلیمنٹ میں کھڑے ہو کر اگر آج یہ باتیں کی ہیں تو وہ جانتے ہیں کہ پاکستانی غیر ت وحمیت والے لوگ ہیں اور پاکستانی فوج اور عوام کس طرح اسلام کی نمائندگی کرتے ہوئے دشمن کے سینوں پر مونگ دل رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ مسلمانوں کی قربانیوں کے نتیجہ میں کفار کے بنائے ہوئے سیاسی ومعاشی نظام اور ڈھانچے بکھر رہے ہیں۔ مسلم حکمران اغیارکے سیاسی و معاشی نظاموں کو بنیاد بنا کر انقلاب برپا کرنے کے خیالات چھوڑ دیں اور اسلامی نظام سمجھنے کی کوشش کریں۔ توحید اسلام کی بنیاد ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ ہم نے سیاسی و معاشی ڈھانچوں کو توحید سے وابستہ کرنے کی کوشش نہیں کی۔ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ مسلمان ایک امت بن جائیں اور مسلمان ملکوں میں سیرت رسول ﷺ کے مطابق پالیسیاں ترتیب دی جائیں۔ انہوں نے کہاکہ امریکہ میں اس وقت نسلی فسادات کا خطرہ ہے۔امریکی خود کو بڑے متمدن اور علم وفہم والے کہلواتے تھے ڈونلڈ ٹرمپ نے جس طرح اسلام دشمنی میں انتہاپسند ی پھیلا کر ووٹ حاصل کئے اس سے ان کے نام نہاد لبرل ازم اور سیکولرازم کے دعووں کی قلعی کھل گئی ہے ۔ امریکیوں نے خود ووٹ دیکر ٹرمپ کو کامیاب کروایا لیکن اب ان کی اپنی ریاستیں علیحدگی کے مطالبے کر رہی ہیں اور کالوں، گوروں کے مابین جھگڑے کھڑے ہورہے ہیں ۔ اس سے یہ بات بھی دنیا پر واضح ہوئی ہے کہ امریکی عوام بدترین نسلی فسادات کا ذہن رکھنے والی قوم ہیں۔

مزید : صفحہ آخر