قومی اسمبلی، 24ویں آئینی ترمیم سمیت 3حکومتی بل منظوری کیلئے پیش

قومی اسمبلی، 24ویں آئینی ترمیم سمیت 3حکومتی بل منظوری کیلئے پیش

اسلام آباد (آئی این پی) قومی اسمبلی میں آئین پاکستان میں ترمیم کیلئے 24ویں آئینی ترمیم سمیت تین حکومتی بل منظوری کیلئے پیش کردیئے گئے۔ تینوں بل مزید غور و خوص کیلئے متعلقہ کمیٹیوں کو بھجوا دیئے گئے۔ 24 ویں آئینی ترمیم کے مطابق آئین کے آرٹیکل184 کی شق نمبر3 کے تحت سپریم کورٹ کے فیصلے کو 30دنوں کے اندر چیلنج کیا جاسکے گا۔ فیصلہ کرنیوالے بینچ سے بڑا بینچ اپیل کی سماعت کرسکے گا۔ جمعہ کو وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کی عدم موجودگی میں 24 ویں آئینی ترمیم سمیت تینوں بل وفاقی وزیر پارلیمانی امور زاہد حامد نے ایوان میں پیش کئے دیگر بلوں میں متبادل تنازعہ جاتی تصفیہ بل 2016 اور لاگت مقدمہ بازی بل 2016 شامل ہیں تینوں بل پیش ہونے کے بعد مزید غور و خوص کے لئے متعلقہ قائمہ کمیٹیوں کو ریفر کردیئے گئے۔ لائن آف کنٹرول پر بھارتی اشتعال انگیزی کیخلاف قومی اسمبلی میں مذمتی قرارداد منظور کرلی گئی ، مذمتی قرارداد وفاقی وزیر امور کشمیر برجیس طاہر نے پیش کی ۔ تفصیلات کے مطابق جمعہ کے روز وفاقی وزیر امور کشمیر برجیس طاہر نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں لائن آف کنٹرول پر بھارتی جارحیت کیخلاف قرارداد پیش کی جو متفقہ طور پر منظور کرلی گئی ہے قرارداد کے متن میں ہے کہ بھارتی بلااشتعال فائرنگ سے ہمارے سات جوان شہید ہوئے لائن آف کنٹرول پر بھارتی جارحیت کی سخت مذمت کرتے ہیں قرارداد میں مسلح افواج کے جوانوں کی قربانیوں اور ان کی بہادری کو خراج تحسین پیش کیا گیا ہے ۔

مزید : صفحہ آخر