تمام جماعتیں ملکر کراچی کے مسائل حل کریں :وسیم اختر

تمام جماعتیں ملکر کراچی کے مسائل حل کریں :وسیم اختر

کراچی(اسٹاف رپورٹر) مئیر کراچی وسیم اخترنے کہا ہے کہ ایکشن پلان ہوچکے اب کراچی ڈویلپمنٹ پلان پرتوجہ دینا ہوگی کیونکہ کراچی میں ترقی ہوئی توآپریشن اورنیشنل ایکشن پلان کی ضرورت نہیں رہے گی، ساری سیاسی جماعتوں کے ساتھ مل کر کراچی کے مسائل حل کریں گے ، کراچی کی ترقی کیلیے صوبائی حکومت سے بیٹھ کر بات کریں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو سندھ اسمبلی کے دورے کے موقع پرمیڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔وسیم اختر نے کہاکہ وہ اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے سے پہلے سندھ اسمبلی کا دورہ کرنا چاہتے تھے، وہ ارکان کی جانب سے استقبال پر سب کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔قبل ازیں مئیر کراچی وسیم اختر سندھ اسمبلی پہنچے جہاں انہوں نے اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی سے ان کے چیمبر میں ملاقات کی، اس موقع پر اسپیکر سندھ اسمبلی نے مئیر کراچی کو رہائی پر مبارکباد سمیت اجرک اور سندھی ٹوپی کا تحفہ بھی دیا۔وسیم اختر نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان اور کراچی آپریشن کو چھوڑ کر ہمیں اس شہر کی ترقی کی طرف دیکھنا ہوگا، ایکشن پلان بہت ہوچکے اب کراچی کیلئے ٹارگٹڈ ڈویلپمنٹ پلان آنا چاہیے کیونکہ شہر کا انفراسٹرکچر تباہی کے دہانے پر ہے اور شہری مشکلات میں گھرے ہیں، کراچی کو ترقیاتی پیکج کی شدید ضرورت ہے۔ کراچی کی ترقی کے بعد ہمیں کسی نیشنل ایکشن پلان اور آپریشن کی ضرورت نہیں پڑے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہاں وہ سخت گیر ہیں لیکن صرف کراچی کے لیے۔ کراچی میں لوگ مشکل میں ہیں، کیا ملیر اور گڈاپ پیرس بن گئے ہیں، کراچی کو ترقی کی ضرورت ہے، کراچی میں ترقی ہو گی تو پورے سندھ میں ترقی ہو گی، ہمیں غدار اور اس قسم کے دیگر القابات سے اب باہر نکلنا چاہیے، وزیر اعلی سندھ سے بہت امیدیں وابستہ ہیں، لوگ امید کرتے ہیں کہ کراچی کے مسائل حل ہوں گے، امید کرتا ہوں کہ ہم سیاسی جماعتوں کے ساتھ مل کر کراچی کے مسائل حل کریں گے۔میئرکراچی نے کہا کہ بلاول جس ماں کا بیٹا ہے انہوں نے جمہوریت کے لیے اپنی جان دی، بلاول کراچی میں پیدا ہوئے،ان کے والدین کی شادی بھی کراچی میں ہوئی، بلاول بھٹوکا شکریہ ادا کرتا ہوں انھوں نے میری رہائی کے لیے آوازاٹھائی۔

مزید : کراچی صفحہ اول