شربت گلہ کارڈ ،2 اسسٹنٹ ڈائریکٹروں کی ضمانت منسوخ

شربت گلہ کارڈ ،2 اسسٹنٹ ڈائریکٹروں کی ضمانت منسوخ

پشاور(نیوزرپورٹر)ایمیگریشن کی خصوصی عدالت کی جج فرح جمشید نے نیشنل جیوگرافک کے پروگرام سے شہرت حاصل کرنے والی افغان خاتون شربت گلہ کوپاکستانی شناختی کارڈ جاری کرنے کے الزام میں ملوث نادرا کے دو اسسٹنٹ ڈائریکٹروں کی عبوری ضمانت منسوخ کردی تاہم ملزموں نے فیصلے سے قبل ہی عدالت کو میڈیکل سرٹیفیکیٹ ارسال کئے کہ وہ ہسپتال میں زیرعلاج ہیں جس پرعدالت نے ان کی گرفتاری کے لئے وارنٹ جاری کردئیے فاضل عدالت نے اسسٹنٹ ڈائریکٹرزنادراپلوشہ آفریدی اورمحسن احسان کی جانب سے دائر عبوری درخواست ضمانت کی سماعت کی اس موقع پر ان کے وکلاء نے عدالت کو بتایا کہ درخواست گذاروں پرالزام ہے کہ انہوں نے ملی بھگت سے شربت گلہ کو قومی شناختی کارڈجاری کیاہے اورایف آئی اے حکام نے نہ صرف شربت گلہ کے خلاف بلکہ نادرا کے اسسٹنٹ ڈائریکٹروں کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا ہے تاہم درخواست گذاروں کے خلاف عائدالزامات میں کوئی صداقت نہیں کیونکہ شربت گلہ کو قبل ازیں سادہ شناختی کارڈبھی جاری ہوچکاہے اوراسی بنیادپراسے کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ جاری کیاگیاہے جبکہ درخواست گذا ر علیل ہیں اورہسپتال میں زیرعلاج ہیں لہذادرخواست گذاروں کی عبوری ضمانت کی توثیق کی جائے عدالت نے دلائل مکمل ہونے پران کی عبوری ضمانت منسوخ کردی اوران کی گرفتاری کے لئے وارنٹ جاری کردئیے۔

مزید : کراچی صفحہ اول