علیحدہ صوبہ،خود مختار ہائیکورٹ کے مطالبے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے،جمشید حیات

علیحدہ صوبہ،خود مختار ہائیکورٹ کے مطالبے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے،جمشید حیات

ملتان(نمائندہ خصوصی )صدرہائیکورٹ بارشیخ جمشید حیات نے کہا ہے کہ اس خطے کے لوگوں کی تکالیف اورمحرومیوں کا احساس کرکے انھیں دورکرنیکی بجائے یہاں جشن منایاجارہاہے اس لئے عدلیہ پر واضح کردیا ہے کہ اپنے حقوق کو کسی صورت نظر اندازنہیں ہونے دیں گے اوریہاں کے وکلاء کی(بقیہ نمبر58صفحہ12پر )

تذلیل اورکوزیادتی برداشت نہیں کی جائیگی اورجس انداز میں بات کی جائے گی اسی اندازمیں جواب دیاجائیگاکیونکہ اگر کسی وکیل کی عزت نہیں ہے تو کسی شخصیت اورادارے کی بھی عزت نہیں ہوگی۔ان خیالات کااظہارانھوں نے گزشتہ روز ہائیکورٹ بارمیں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ہے۔انھوں نے مزید کہا کہ اس خطے کے حقوق کو مسلسل پامال کیا جارہا ہے اورچیف جسٹس پاکستان کی جانب سے ججز تعیناتی کے لئے واپس بھجوائی گئی فہرست کوتبدیل کئے بغیر اسی طرح دوبارہ بھیج دیاگیالیکن اب وفاقی و صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کرتے ہیں قانون سازی کرکے جنوبی پنجاب کو علیحدہ صوبہ اورخودمختارہائیکورٹ دی جائے اوروکلاء اس مطالبے سے کسی صورت پیچھے نہیں ہٹیں گے۔انھوں نے کہاکہ اس خطے کے حقوق کی پامالی کے بعد یہاں جشن منانا قابل افسوس ہے اورحتیٰ کہ ہائیکورٹ میں ملتان کے 4 ججز کو مطالبہ کے باوجود ہمارے ساتھ مل بیٹھ کر مسائل سننے کے لئے بھی نہیں بھجوایاگیا۔انھوں نے کہاکہ ملتان بینچ میں علاقائی بینچز قائم کرکے عدم توازن پیداکردیا گیا ہے اورججز مخصوص ہونے کی وجہ سے رخصت پر اس علاقہ کی پوری فہرست ہی منسوخ ہوجاتی ہے ۔ اس طرح سوئی گیس اور ٹیکس کے مقدمات لاہور منتقل کردئیے گئے ہیں اس طرح زیادہ پیسے رکھنے والوں کو براہ راست لاہور میں مقدمات دائر کرنے کا غیر قانونی اختیاردے کر سائلوں پر مالی بوجھ ڈالنے کے ساتھ وکلاء کو بھی متاثرکیا ہے۔اس موقع پرصدرڈسٹرکٹ بار عظیم الحق پیرزادہ نے کہا کہ ہائیکورٹ کی عمارت پر بنے ترازو کے توازن کو آج تک خراب نہیں کیا گیا تھالیکن پہلی باراس ترازو کے توازن کوبگاڑ دیاگیا ہے جبکہ باراوربینچ ایک دوسرے کے بغیر نہیں چل سکتے ہیں اورقانون کی خلاف ورزی کسی منصف کوزیب نہیں دیتی ہے جس طرح بارکونسل اینڈ لیگل پریکٹیشنز ایکٹ کے باوجود سپروائزری کمیٹی بناکر کی گئی ہے انھوں نے کہا کہ علیحدہ صوبہ اورخودمختارہائیکورٹ کے قیام تک تحریک جاری رہے گی اوراس کے لئے عنقریب تمام طبقات پر مشتمل بڑا کنونشن منعقد کیاجائیگا اورڈکٹیٹرشپ کو کسی صورت تسلیم نہیں کریں گے۔اس موقع پر سابق صدرہائیکورٹ بارسید اطہر حسن شاہ بخاری ،سابق جنر ل سیکرٹری ہائیکورٹ بارسید ریاض الحسن گیلانی اورممبر ایگزیکٹو محمد حسین بابر بھی موجود تھے۔

جمشید حیات

مزید : ملتان صفحہ آخر