چکوال،7بلدیاتی اداروں کے چیئرمینوں ووائس کیلئے جوڑ توڑ شروع

چکوال،7بلدیاتی اداروں کے چیئرمینوں ووائس کیلئے جوڑ توڑ شروع

چکوال (ڈسٹرکٹ رپورٹر)ضلع کونسل چکوال کی چیئرمینی اور چھ میونسپل کمیٹیوں میں مخصوص نشستوں کا الیکشن مکمل ہونے کے بعد اب ان سات بلدیاتی اداروں کے چیئرمینوں اور وائس چیئرمینوں کے لیے جوڑ توڑ شروع ہو گیا ہے ، ضلع کونسل چکوال کے 95رکنی ایوان میں مسلم لیگ ن کو واضح او رفیصلہ کن برتری حاصل ہے اور مسلم لیگ ن کے ممبران کی تعداد83ہے جبکہ پی ٹی آئی کے چھ اور مسلم لیگ ق کے بھی چھ ممبران ہیں اور دونوں جماعتو ں نے مسلم لیگ ن کی بھرپور اپوزیشن کا فیصلہ کیا ہے ۔ مسلم لیگ ن کے اندر اس وقت دو گروپ واضح طور پر سامنے آ چکے ہیں جن میں ایک طرف صوبائی وزیر ہاؤسنگ ملک تنویر اسلم سیتھی ،معاون خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب ملک سلیم اقبال ، ایم پی اے ملک ظہور انور اور سابق ضلع ناظم سردار غلام عباس جن کے اپنے ممبران کی تعداد 28ہے مجموعی طورپر اس گروپ کو 60سے زیادہ ممبران کی حمایت حاصل ہے اور عددی اعتبار سے یہ گروپ فیصلہ کن پوزیشن میں ہے دوسری طرف ایم این اے سردار ممتاز ٹمن ، ایم این اے میجر طاہر اقبال ، ایم پی اے سردار ذوالفقار علی خان دلہہ ہیں جن کے پاس عددی تعداد کم ہے مگر پارلیمنٹرین ہونے کا دباؤ حکومت پر مضبوط ہے ، ایم این اے بیگم عفت لیاقت اور ایم پی اے چوہدری لیاقت علی خان تمام صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں اور انہوں نے دونوں گروپوں میں سے کس کے ساتھ جانا ہے اس کا فیصلہ کرنا ہے ۔ ایم پی اے مہوش سلطانہ اور سینیٹر جنرل عبدالقیوم کی بلدیاتی اداروں میں کوئی واضح موجودگی نہیں لہذا عملی طور پر یہ دونوں پارلیمنٹرین بلدیاتی اداروں کی سیاست سے فارغ ہیں۔ میجر طاہر اقبال ایم این اے کی طرف سے ان کے بھائی ملک نعیم اصغر چیئرمین ضلع کونسل کے امیدوار ہیں جبکہ دوسری طرف صوبائی وزیر کے والد ملک اسلم سیتھی بھی چیئرمین ضلع کونسل کی نشست پر امیدوار ہیں ۔ جبکہ ملک سلیم اقبال چیئرمین ضلع کونسل تلہ گنگ اورلاوہ سے لانا چاہتے ہیں انہوں نے ملک اسلم ڈھلی کو آگے کر رکھا ہے ۔ بہر حال چیئرمین ضلع کونسل چکوال کا فیصلہ مسلم لیگ ن کی ہائی کمان نے کرنا ہے اور اس ضمن میں رائے ونڈ کی حمایت حاصل کرنے کے لیے لابنگ شروع ہو چکی ہے ۔ وزیراعلیٰ پنجاب شہبا زشریف اپنے دورہ چکوال میں واضح طور پر اعلان کر کے گئے ہیں کہ وہ ضلع کونسل کی سر براہی کے لیے عوام کے خادم سامنے لائیں گے۔ بہر حال ضلع کونسل چکوال کا اہم عہدہ حاصل کرنے کے لیے پارلیمنٹرین کے اندر کشمکش شروع ہو چکی ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر