صوبہ میں نیا تعلیمی سسٹم رائج کرنیکا فیصلہ، افسران کو تیاریاں مکمل کرنیکی ہدایت

صوبہ میں نیا تعلیمی سسٹم رائج کرنیکا فیصلہ، افسران کو تیاریاں مکمل کرنیکی ...

ملتان( سٹاف رپورٹر ) ملتان سمیت صوبے کے36اضلاع میں جنوری 2017میں نیا تعلیمی سسٹم رائج کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا‘ ا فسران تعلیمکو ہدایات جاری کر دی گئیں‘ذرائع کے مطابق حکومت پنجاب نے صوبے میں میئرز اور چیئرمین ضلع کونسل کے آئندہ ماہ دسمبر میں انتخابات مکمل ہونے (بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

کے بعد نئے سال کے آغاز پر جنوری2017میں صوبے کے تمام 36اضلاع میں نیا تعلیمی سسٹم رائج کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ‘ ضلع کی سطح پرایجوکیشن اتھارٹیز قائم کی جائیں گی‘ اس بارے میں تمام ضلعی افسران کو تیاریا ں مکمل کرنے ی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں‘ بتایا گیا ہے کہ ایجوکیشن اتھارٹیز کے قیا م کے ساتھ ہی تمام اضلاع میں ای ڈی او ایجوکیشن کا نظام ختم کرکے پرانا تعلیمی ڈائریکٹوریٹ سسٹم بھی بحال کر دیا جائے گا ‘معلوم ہوا ہے کہ ایجوکیشن اتھارٹیز میں ملتان سمیت بڑے اضلاع میں 11ممبران جبکہ چھوٹے اضلاع میں 7سے 9ممبران ہونگے ‘ اتھارٹی کا سربراہ میئر یا چیئرمین ضلع کونسل ہوگا ‘ ممبران میں افسران تعلیم‘ ریٹائر ججز ‘ سول سوسائٹی کے افراد اور طلبہ کے والدین شامل ہو نگے‘ واضح رہے کہ ایجوکیشن اتھارٹیز کو نئے سکول بنانے ‘ پرانے ختم کرنے ‘ ٹیچرز اور نان ٹیچنگ سٹاف بھرتی کرنے اور ان کی سیٹیں مقرر کرنے کا اختیار بھی حاصل ہو گا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر