معدنیات کے کاروبار سے وابستہ تاجروں سے کروڑوں روپے بھتہ کا مطالبہ

معدنیات کے کاروبار سے وابستہ تاجروں سے کروڑوں روپے بھتہ کا مطالبہ

چارسدہ (بیورورپورٹ) معدنیات کے کاروبار سے وابستہ تاجروں سے کروڑوں روپے بھتہ کا مطالبہ ۔ حکومت کو سالانہ 20لاکھ روپے ٹیکس دیتے ہیں ۔ اب حکومت کی ذمہ داری ہے کہ ہماری جان ومال کا تحفظ کرکے بھتہ خوروں سے نجات دلائے ۔ ان خیالات کا اظہار محمد اسماعیل نے میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مہمند ایجنسی کے چند شر پسند عناصر جن میں مبینہ طور پر حاجی نیک محمد اور ملک عبداللہ شامل ہیں کئی دنوں سے ہمارے رشتہ دار حاجی حمید کو دھمکیاں دیتے ہیں اور ان سے کروڑوں روپے بھتہ کامطالبہ کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ان بھتہ خوروں کے حوالے سے کئی بار حکام سے رابطہ کیا گیا مگر کوئی شنوائی نہیں ہو ئی ۔ انہوں نے کہا کہ میرا رشتہ دار حاجی حمید معدنیات کا اپنا کاروبار کرتے ہیں اور حکومت کو سالانہ لاکھوں روپے ٹیکس دیتے ہیں جبکہ فلا حی کاموں میں بھی حصہ لیتے ہیں انہوں نے کہا کہ ایسے شرپسندوں کے خلاف کاروائی کی جائے جو شریف شہریوں سے حلال کمائی بھتہ مانگتے ہیں انہوں نے گورنر کے پی کے اقبال ظفر جھگڑا وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کمشنر پشاور اور پولیٹیکل مہمند ایجنسی اور دیگر اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ مہمند ایجنسی کے بھتہ خوروں سے ہمیں نجات دلائی جائے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر