خیبرپختونخوا کی وزارت محنت اور خصوصی کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس

خیبرپختونخوا کی وزارت محنت اور خصوصی کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کی وزیر محنت اور صوبائی اسمبلی کی خصوصی کمیٹی برائے محکمہ داخلہ و قبائلی امور کی چیئر پرسن انیسہ زیب طاہر خیلی کی زیر صدارت صوبائی اسمبلی کے کانفرنس رو م میں جمعہ کے روز کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا جس میں کمیٹی کے ممبران و اراکین اسمبلی زرین گل،سردار حسین بابک،محمود جان،سردار اورنگزیب نلوٹھا،ارباب وسیم حیات اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواکے مشیر برائے جیل خانہ جات ملک قاسم خان کے علاوہ صوبائی اسمبلی کے سینئر ایڈیشنل سیکرٹری کفایت اللہ،ایڈیشنل سیکرٹری غلام سرور،سیکرٹری محکمہ داخلہ شکیل قادر خان،آئی جی جیل خانہ جات عزیز خان خٹک ،سپرنٹنڈنٹ سنٹرل جیل پشاور مسعود الرحمان اور محکمہ قانون ،اسٹبلشمنٹ و دیگر متعلقہ محکمہ جات کے افسران نے شرکت کی۔اجلاس میں جیل خانہ جات میں بھرتیوں کے حوالے سے کئی امور زیر بحث آئے جبکہ کمیٹی کے ممبران نے اس حوالے سے اپنی آ راء بھی پیش کی۔ اجلاس میں محکمہ داخلہ کا موقف تھا کہ جیل خانہ جات میں وارڈنز کی بھرتی کا عمل خیبر پختونخوا جیل قواعد1985اور خیبر پختونخوا محکمہ جیل خانہ جات سروس و ریکروٹمنٹ رولز1985 کے مطابق ہونا لازمی ہے تاہم ممبران کمیٹی نے موقف اختیار کیا کہ بھرتیوں کے عمل کو NTSکے ذریعے کیا جائے تاکہ اس میں شفافیت اور میرٹ کا خیال رکھا جائے اور حقدار وں کو ان کا حق ملے۔اجلاس میں کسی حتمی فیصلے تک پہنچنے اور محکمہ جیل خانہ جات کی جانب سے ایک مکمل پریزنٹیشن پیش کرنے کیلئے آئندہ23تاریخ کو دوبارہ اجلاس طلب کیا گیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر