13 جونیئر کلینکل ٹیکنشنز کی برطرفی محکمہ صحت سے جواب طلب

13 جونیئر کلینکل ٹیکنشنز کی برطرفی محکمہ صحت سے جواب طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس سید افسرشاہ اور جسٹس ابراہیم خان پرمشتمل دورکنی بنچ نے خیبرپختونخواکے مختلف ہسپتالوں میں تعینات 13 جونیئر کلینکل ٹیکنیشنز کی ممکنہ برطرفی روکتے ہوئے محکمہ صحت سے جواب مانگ لیاہے فاضل بنچ نے اعجازصابی ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائرمحمدعامرسمیت تیرہ درخواست گذاروں کی رٹ کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار نومبر2013میں بطورجونیئرٹیکنیشن بھرتی ہوئے اورتین سال گذرنے کے بعد انہیں کہاگیاہے کہ یہ ڈپلومہ خیبرپختونخوامیڈیکل فیکلٹی سے ویری فائی کرائیں حالانکہ بھرتی کے عمل کے دوران انہیں اس بناء یہ رعایت دی گئی تھی کہ انہوں نے یہ ڈپلومہ پمزسے حاصل کئے تھے اورپمزسے تصدیق لازم قرار دی تھی جو انہوں نے کرلی تھی مگراب انہیں دوبارہ شوکاذ نوٹس جاری کیاگیاہے کہ یہ ڈپلومہ خیبرمیڈیکل فیکلٹی سے تصدیق نہ کرانے پرپندرہ یوم میں ملازمت سے فارغ کردیاجائے گا جو کہ غیرقانونی اقدام ہے جس پرعدالت نے جاری کردہ شوکاذنوٹس معطل کردیا اورسیکرٹری ہیلتھ اورڈی جی ہیلتھ سے جواب مانگ لیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر