حیدر آباد میں ذہنی مریض ڈاکٹر نے والدہ اور بیٹیوں کو یرغمال بنا لیا ، پولیس حکام مذاکرات میں مصروف

حیدر آباد میں ذہنی مریض ڈاکٹر نے والدہ اور بیٹیوں کو یرغمال بنا لیا ، پولیس ...
حیدر آباد میں ذہنی مریض ڈاکٹر نے والدہ اور بیٹیوں کو یرغمال بنا لیا ، پولیس حکام مذاکرات میں مصروف

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

حیدر آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )حیدر آباد کے علاقے قاسم آباد میں ذہنی مریض ڈاکٹر نے اپنی بیٹیوں اور والدہ کو یرغمال بنا لیا ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق حیدر آباد کے ثناءپلازہ میں مقیم ابراہیم نامی ڈاکٹر نے فائرنگ کر دی جس کے بعد پولیس اور رینجرز کے دستے پہنچے تو ذہنی مریض اس شخص نے اپنی والدہ اور 2 بیٹیوں کو یرغمال بنا لیا اور دھمکی دی ہے کہ اگر اسے گرفتار کرنے کی کوشش کی گئی تو وہ انہیں قتل کر دے گا۔

بھارتی تحقیقاتی ادارے کا ڈاکٹر ذاکر نائیک کے دفاتر پر چھاپا اور تلاشی 

ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس اور رینجرز حکام کے اس شخص کیساتھ مذاکرات جاری ہیں تاہم ابھی اس حوالے سے کوئی کامیابی حاصل نہیں ہوئی ۔

پولیس کے مطابق ڈاکٹر نے گزشتہ روز بھی فائرنگ کی تھی جس سے ایک بچہ زخمی ہوا تھا تاہم ذہنی مرض کی وجہ سے اس کی بیوی بھی اسے چھوڑ کر جا چکی ہے ۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اس شخص کے پاس پستول موجود ہے اور یہ اپنے بچوں اور والدہ کو نقصان پہنچا سکتا ہے ۔تاہم پولیس اور رینجرز نے گھر کو گھیرے میں لیا ہوا ہے اور مذاکرات کا سلسلہ جاری ہے ۔

مزید : حیدرآباد