جسٹس امیر ہانی مسلم اور نہال ہاشمی کی ملاقات کی جھوٹی خبر چلانے والے نجی ٹی وی کو توہین عدالت کا نوٹس جاری

جسٹس امیر ہانی مسلم اور نہال ہاشمی کی ملاقات کی جھوٹی خبر چلانے والے نجی ٹی ...
جسٹس امیر ہانی مسلم اور نہال ہاشمی کی ملاقات کی جھوٹی خبر چلانے والے نجی ٹی وی کو توہین عدالت کا نوٹس جاری

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)عدالت عظمی نے مسلم لیگی رہنما سینیٹر نہال ہاشمی اور جسٹس امیر ہانی مسلم کی ملاقات کی جھوٹی خبر چلانے پر نجی ٹی وی چینل کی انتظامیہ  کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کر دیا۔

سپریم کورٹ کے ترجمان شاہد حسین کے مطابق سپریم کورٹ نے جسٹس امیر ہانی مسلم اور مسلم لیگی رہنما نہال ہاشمی کی ملاقات کی جھوٹی خبر چلانے کا نوٹس لے لیا ۔ ترجمان سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ نجی ٹی وی چینل نے سپریم کورٹ کے جج اور مسلم لیگی رہنما کی ملاقات کی جھوٹی خبر چلا کر عدلیہ اور ججز کی توہین کی ہے۔ ٹی وی کی رپورٹ بے بنیا د او ر قابل مذمت ہے، خبر کا مقصد بظاہر عدلیہ اور ججز کو بدنام کرنا ہے۔ ترجمان نے مزید کہا کہ یہ خبر پانامہ کیس کی کارروائی میں رکاوٹ ڈالنے کی کوشش ہے۔

سپریم کورٹ کے رجسٹرار کی جانب سے توجہ دلائے جانے کے بعد چیف جسٹس آف پاکستان نے نجی ٹی وی کے متعلقہ لوگوں (رپورٹر، اینکر پرسن، پروڈیوسر ، ڈائریکٹر نیوز اور انتظامیہ وغیرہ) کو توہین عدالت کے نوٹس جاری کرنے کا حکم دیا ہے۔ نجی ٹی وی کے خلاف توہین عدالت کے کیس کی سماعت 28 نومبر کو ہوگی۔

واضح رہے کہ جمعہ کو نجی ٹی وی دن نیوز نے ایک خبر چلائی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ سپریم کورٹ کے جج جسٹس امیر ہانی مسلم نے مسلم لیگ کے رہنما سینیٹر نہال ہاشمی سے پاناما لیکس کے معاملے میں ملاقات کی ہے۔ دن نیوز کی جانب سے یہ خبر چلائے جانے کے بعد اسے سوشل میڈیا پر خوب پذیرائی ملی تھی اور  لوگ اس پر طرح طرح کے تبصرے کر رہے تھے جس سے عدالت کا تقدس پامال ہورہا تھا۔

مزید : قومی /اہم خبریں