جو عورت ایک مرتبہ بھی یہ کام کرے اس سے شادی نہیں کریں گے ‘ سعودی مردوں کی ایسی عجیب و غریب خواہش کہ عقل دنگ رہ جائے

جو عورت ایک مرتبہ بھی یہ کام کرے اس سے شادی نہیں کریں گے ‘ سعودی مردوں کی ایسی ...
جو عورت ایک مرتبہ بھی یہ کام کرے اس سے شادی نہیں کریں گے ‘ سعودی مردوں کی ایسی عجیب و غریب خواہش کہ عقل دنگ رہ جائے

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) خوبصورتی میں اضافے کیلئے پلاسٹک سرجری جیسے مصنوعی سہاروں کا استعمال دنیا بھر میں عام ہو رہا اور سعودی خواتین میں بھی اس کی مقبولیت کچھ کم نہیں ، البتہ سعودی مردوں نے کہہ کر ان خواتین کو پریشان کر دیا ہے کہ وہ ان میں کوئی دلچسپی نہیں رکھتے کیونکہ وہ مصنوعی حسن پر قدرتی حسن کو ترجیح دیتے ہیں۔

سعودی گزٹ کی رپورٹ کے مطابق ایک بڑے پلاسٹک سرجری سنٹر کی جانب سے جمع کیے گئے حالیہ اعدادوشمار سے پتا چلا ہے کہ خلیجی ممالک میں 2016 کے دوران کیے گئے پلاسٹک سرجری آپریشنوں میں سے تقریباً 88 فیصد خواتین نے کروائے جبکہ اس سروس سے 12 فیصد مردوں نے بھی استفادہ کیا۔ پلاسٹک سرجری کی خدمات میں لائپو سیکشن اور رائنو پلاسٹی سر فہرست رہیں۔

سعودی گزٹ نے اس موضوع پر رائے لینے کیلئے ایک سروے کیا جس میں مردوں کی بڑی تعداد کا کہنا تھا کہ وہ مصنوعی حسن پر قدرتی حسن کو ترجیح دیتے ہیں۔ صفوان مخداری نامی نوجوان کا کہنا تھا کہ وہ پلاسٹک سرجری کو اس لیے پسند نہیں کرتے کہ یہ قدرت کی دی ہوئی شکل و صورت کو تبدیل کرنے کے مترادف ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خدا نے ہمیں جیسا بنایاہے ہمیں اسی پر خوش ہونا چاہیے۔

اسی طرح سعد ناہولی نامی شخص نے بتایا کہ وہ خواتین کی فطری خوبصوتی سے متاثر ہوتے ہیں اور مصنوعی سہاروں سے حاصل کیا گیا حسن انہیں بالکل مائل نہیں کرتا۔ ہیتم نامی نوجوان کا کہنا تھا کہ ہمیں قدرت کی جانب سے عطا کے گئے حسن پر خود عتمادی محسوس کرنی چاہیے اور مصنوعی حسن کو اپنا سہارا نہیں بنانا چاہیے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر کسی کے دل میں آپ کی سچی محبت ہے تو یہ محبت شکل و صورت کی محتاج نہیں اور اسی طرح مصنوعی سہاروں سے حسن میں اضافہ کر کے آپ کسی کے دل میں محبت پیدا نہیں کر سکتے۔

احمد محمد نامی شخص نے اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پلاسٹک سرجری کا استعمال مجبوری کی صورت میں تو سمجھ آتا ہے لیکن بصورت دیگر اس کی ضرورت نہیں ہونی چاہیے۔ ان کا کہناتھا کہ حادثات کی صورت میں جسم میں بگاڑ پیدا ہو جائے تو اسے درست کرنے کیلئے پلاسٹک سرجری ضرور ہونی چاہیے لیکن محض حسن میں اضافے کیلئے اس کا استعمال اچھی بات نہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس