دھرنا مظاہرین سے مذاکرات جاری ہیں ،امید ہے کہ بات چیت سے معاملات طے کرلیںگے:احسن اقبال

دھرنا مظاہرین سے مذاکرات جاری ہیں ،امید ہے کہ بات چیت سے معاملات طے ...
دھرنا مظاہرین سے مذاکرات جاری ہیں ،امید ہے کہ بات چیت سے معاملات طے کرلیںگے:احسن اقبال

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ ہمارے مذاکرات جاری ہیں آئند ہ ایک روز میں خوشخبری ملے گی،پوری امید ہے کہ بات چیت کے ذریعے دھرنا ختم کرانے میں کامیاب ہوجائیں گے،ہم کشیدگی یا تناو کی صورت حال سے بچنا چاہتے ہیں،حکومت پر عوامی دباو بڑھ رہا ہے،اسلام آباد اور راولپنڈی کے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

حکومت اور دھرنا قائدین کے مذاکرات ختم ، پیش رفت کا امکان ، شرکا ء نے لچک ظاہر کردی

اسلام آباد میں میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے دفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا تھاکہ وزیرقانون سے ا ستعفے کا مطالبہ ٹھوس ثبوت اور دلیل تک ممکن نہیں،وزیرقانون کااستعفی اس وقت تک طلب نہیں کیاجاسکتاجب تک جرم ثابت نہ ہو،وزیرقانون نے ختم نبوت پر ایمان لانے سے متعلق بیان جاری کیاہے،یہ عام مسئلہ نہیں ایمان کا مسئلہ ہے آپ کسی کومجرم نہیں بناسکتے،علماومشائخ نے چند تجاویز دی ہیں جو قابل عمل بھی ہیں،ہماری کوشش ہے کہ مذاکرات سے حل نکالیں۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ یہ کوئی سیاسی دھرنا نہیں اس میں مذہبی جذبات شامل ہیں،ہم سمجھتے ہیں کہ وہاں لوگ مذہبی جذبات کے ساتھ آئے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ملک کسی کشمکش کا متحمل نہیں ہوسکتا ،احساس ہے کہ دھرنے سے لاکھوں شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے،طالب علموں کو مشکلات ہیں سرکاری ملازمین کو مشکلات ہیں،چند دن بعدعیدمیلادالنبی ہے یہ خوشی پوری قوم منانا چاہتی ہے۔

وفاقی وزیرداخلہ کا کہناتھا کہ ہمیں بیرونی اور دہشتگردی کے خطرات کا بھی سامنا ہے،کوشش ہے کہ کل تک معاملہ فائنل ہوجائے۔

احسن اقبال کا کہناتھا کہ پاکستان میں ہمیشہ کے لیے ختم نبوت کا مسئلہ حل کردیا گیاہے،2002سے فوت ہوئے قانون کو پاکستان کے آئین میں پکی جگہ دیدی ہے،جو قانون پاس کیا ہے وہ 1974کے مقابلے میں بڑا کارنامہ ہے۔وزیر داخلہ کہتے ہیں کہ جید علما اور مشائخ کی قیادت بھی راجہ ظفرالحق کی رہائشگاہ آئی تھی،علما ومشائخ مسئلہ حل کرانے کیلیے آگے بڑھے ہیں امید ہے مسئلہ حل ہوجائیگا،ہم نے سنجیدگی اور جذبے کے ساتھ پرخلوص کوشش کی ہے۔

وفاقی وزیر داخلہ نے مزید کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے دھرنا ختم کرنے کا حکم دیا ہے جس کی مدت آج تک تھی،عدالت سے درخواست ہے عدالت ہمیں مزید ایک دو روز دے دیں۔

مزید : قومی /اہم خبریں