جے جے وی ایل کرپشن کیس ،ملزمان کے وکلاء سے دلائل طلب

جے جے وی ایل کرپشن کیس ،ملزمان کے وکلاء سے دلائل طلب

v

کراچی (اسٹاف رپورٹر)احتساب عدالت نے ڈاکٹر عاصم حسین اور دیگر کے خلاف 17 ارب روپے کے جے جے وی ایل کرپشن ریفرنس میں بشارت مرزا اور شعیب وارثی کے وکلا سے دلائل طلب کرتے ہوئے سماعت 24 نومبر تک ملتوی کردی۔ہفتہ کو کراچی کی احتساب عدالت کے روبرو ڈاکٹر عاصم و دیگر کے خلاف 17 ارب روپے کرپشن ریفرنس کی سماعت ہوئی۔ ملزمان پر ممکنہ فرد جرم روکنے کی درخواست پر وکیل انور منصور نے دلائل مکمل کرلیے۔ ڈاکٹر عاصم کے وکیل نے جو دستاویزات پیش کی گئی ہیں ان میں شاہد خاقان عباسی کا بھی نام شامل ہے۔ ڈاکٹر عاصم کے انور منصور نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم کی مشیر مفتاح اسمعیل کا نام ملزمان کی فہرست میں شامل ہے۔ ملزمان کی فہرست میں نام ہونے کے باوجود شاہد خاقان عباسی اور مفتاح اسمعیل کو گرفتار نہیں کیا گیا۔ انور منصور نے کہا کہ ریفرنس سیاسی انتقام کی بنیاد پر بنایا گیا۔ ڈاکٹر عاصم نے جے جے وی ایل کو ٹھیکہ دینے کی منظوری نہیں دی۔ جے جے وی ایل کو گیس نکالنے کی منظوری بورڈ نے دی۔ وکیل ڈاکٹر عاصم انور منصور نے کہا کہ بے بنیاد الزامات پر ڈاکٹر عاصم کو ملزم بنا دیا گیا۔ جب ملزم کے خلاف کوئی شواہد ہی نا ہوں تو فرد جرم کیسے عائد کی جاسکتی ہے۔ آئندہ سماعت پر ملزم بشارت مرزا اور شعیب وارثی کے وکیل دلائل دیں گے۔ عدالت نے سماعت 24 نومبر تک ملتوی کردی۔ احتساب عدالت آمد پر ڈاکٹر عاصم کی غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں 6 ہفتوں کے لئے ملک سے باہر جار ہوں میں نے اس لئے عہدہ چھوڑا۔ ملک میں الیکشن ہونے والے ہیں۔ آج میں سیاست کی کوئی بات نہیں کرنا چاہتا۔ ڈاکٹر عاصم نے کہا کہ مجھ سے آج ہیلتھ اور ایجوکیشن سے متعلق سوال کریں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر