نوجوان قتل، بس ڈرائیور کی غفلت نے 2جانیں لے لیں

نوجوان قتل، بس ڈرائیور کی غفلت نے 2جانیں لے لیں

وہاڑی ، خان پور، چشتیاں، خانقا شریف (نمائندگان) نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے نوجوان کو قتل کردیا ۔ زیر تعمیر دیوار گرنے سے ایک بچہ جاں بحق 2زخمی ہوگئے۔ بس ڈرائیور کی غفلت نے 2افراد کی جان لے لی طلبہ سمیت 4زخمی زیریلے (بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

کیڑے کے کاٹنے سے 2سالہ بچہ دم توڑ گیا۔ وہاڑی سے بیورو پورٹ، نمائندہ خصوصی کے مطابق لڈن کے نواحی علاقہ محمد آباد میں زیر تعمیر دیوار گرنے سے آہنی گیٹ گرگیا ، جس کے نتیجہ میں قریب کھیلتے ہوئے ایک بچہ جاں بحق ، جبکہ دو بچے شدید زخمی ہو گئے ، جن کو مقامی افراد نے اپنی مدد آپ کے ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کردیا ذرائع کے مطابق مرنے والے چارسالہ بچے کا نام نعیم حسین ولد محمد مجید جبکہ زخمیوں کے نام محمد عرفان ولد محمد اشرف اور علی حسن ولد ندیم معلوم ہوا ہے ایم ایس ڈاکٹر فاروق احمد حادثہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایچ کیو ہسپتال پہنچ گئے اور ڈاکٹر و ں کو فوری علاج ومعالجہ کی ہدایت کی ہے جبکہ ڈاکٹر و ں نے تشویشناک حالت پر محمد عرفان کو نشتر ہسپتال ملتان ریفر کردیا ہے۔ خان پور سے نامہ نگار، تحصیل رپورٹر، نمائندہ خصوصی کے مطابق الفرید کمپنی کی بس کے ڈرائیور کی غفلت اور تیز رفتاری کے باعث بس کی چھت پر سوار مسافر ظاہر پیر روڈ پرمائی والی مسجد کے قریب سڑک پر بڑ ھے ہوئے درخت کی زد میں آگئے جس کے نتیجے میں قادر آباد وہاڑی کا عرفان اور فتح پور کا اصغر موقعہ پر جاں بحق ہوگئے جبکہ تین طلباء سمیت غازی پور کا عارف شدید زخمی ہوگئے ، زخمیوں اور جاں بحق ہونے والوں کو 1122کی ٹیموں نے چھت سے اتارا ،زخمیوں کوTHQاور شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں ان کی حالت غیر تسلی بخش بتائی گئی ہے ، اس سے قبل نواں کوٹ روڈ پر بستی دین کے قریب تیز رفتار شہہ زور ڈالے کی زد میں آکر خان بیلہ کے رہائشی تین افراد ساجد ، عبدالعزیز اور محمد بخش شدید زخمی ہوگئے جنہیںTHQمنتقل کردیا گیا ، تھانہ صدر پویس نے دونوں حادثات کی ابتدائی کاروائی مکمل کرلی ہے ۔ چشتیاں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق چشتیاں کے ایک دیہات میں کپاس کی چنائی کے دوران ایک کاشتکار کے دو سالہ بیٹے محمد عثمان کو بنے پر پڑے ہوئے زہریلے جانور نے کاٹ لیا جسے بگڑی ہوئی حالت دیکھ کر ہسپتال لایا گیا جو راستے میں دم توڑ گیا ۔ خانقاہ شریف سے نمائندہ پاکستان کے مطابق ٹبی داتاکے رہائشی عبدالمالک نے تھانہ مسافر خانہ میں ایک تحریری درخواست دی ہے کہ اس کا بیٹا شعب موٹر سائکل پر سودا سلف لینے کے لیے گھر سے باہر گیا اور کافی دیر تک گھر واپس نا آیا میں راشد اور مظہراقبال کے ساتھ تلاش کے لیے نکلے تو شہاب دربارکے قریب سولنگ پر پہنچے تومیرے بیٹے شعیب کی نعش خون میں لت پت پڑی تھی اس کی گردن پر گولی لگنے کا نشان تھااور نعش ابھی وہیں پڑی ہے پولیس مسافر خانہ نے مقتول شعیب کی نعش فوری طور پررولرہیلتھ سینٹر خانقاہ شریف میں پوسٹ مارٹم کے لیے بھیج دی ہے اور نامعلوم قاتلوں کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر