دلہن کے خانے میں لڑکی کے والد کا نام لکھنے پر10افراد کیخلاف مقدمے کا حکم

دلہن کے خانے میں لڑکی کے والد کا نام لکھنے پر10افراد کیخلاف مقدمے کا حکم
دلہن کے خانے میں لڑکی کے والد کا نام لکھنے پر10افراد کیخلاف مقدمے کا حکم

  


وہاڑی(ویب ڈیسک)نکاح نامے پر لڑکی کی جگہ اسکے باپ کا نام درج کرنے پر عدالت نے چیئرمین بلدیہ ،نکاح خواں سمیت 10افراد کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیدیا۔تفصیل کے مطابق 445ای بی کے طارق ارائیں نے ایڈیشنل سیشن جج رضا اللہ خان کی عدالت میں موقف اختیار کیا کہ نکاح خواں اور نکاح رجسٹرار لیاقت علی اور حافظ نذیر نے 4سال قبل ذوالفقار علی کی بیٹی آمنہ بی بی کا نکاح ڈاکٹر محمد دین سے پڑھایا او ر نکاح نامہ پر لڑکی کی جگہ اسکے والد کا نام لکھ کر اسلامی شعائر کا مذاق اڑایا ،عدالتی حکم کے بعد پولیس نے واقعہ کی تصدیق کے بعد واضح کیا کہ مرد کا مرد سے نکاح نہیں ہوا بلکہ نکاح رجسٹرار کی تحریری غلطی ہے ، واضح رہے کہ میونسپل کمیٹی کے ریکارڈ میں دلہن کی جگہ آمنہ بی بی کا نام ہی درج ہے۔

مزید : وہاڑی