نوازشریف ایشو پر بدلتا موقف حکومتی چہرہ خراب کر رہا ہے،لیاقت بلوچ

  نوازشریف ایشو پر بدلتا موقف حکومتی چہرہ خراب کر رہا ہے،لیاقت بلوچ

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) نائب امیر جماعت اسلامی لیاقت بلوچ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت نواز شریف مقدمہ پر کھسیانی بلی کھمبہ نوچے کے مترادف موقف اختیار کررہی ہے۔اگر حکومت یہ تسلیم کرلیتی ہے کہ نواز شریف کی بیماری خطرناک ہے تو اب بلاوجہ کی سیاست نہ کی جائے۔علاج کی سہولت دینے کا اقدام کیا ہے تو اب سنجیدگی سے عمل بھی کرے۔بدلتا موقف حکومت کا چہرہ ہی خراب کررہا ہے۔عمران خان کی اسی کیفیت کے پیش نظر ان کے معا لجین نے انہیں آرام اورخصوصی گپ شپ کی ہدایت کی ہے۔۔

حکومت عوام کی حالت پر رحم کرے اور عوام کے معاشی روزگار اورمہنگائی کے مسائل حل کرے۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ عالم اسلام کے لیے پاکستان کا کردار اہم ہے۔بدقسمتی سے طویل مدت سے پاکستان میں سیاست اور ریاست کا تصادم،قومی،عسکری اور سیاسی قیادت کے درمیان بے اعتمادی کا بحران پیدا کررہی ہے۔یہ وقت ہے کہ ملک و ملت، جمہوریت،پارلیمانی نظام کے تحفظ،عوام کے دکھ در د، بڑھتے مسائل کے مداوا کے لیے بر وقت اقدامات کیے جائیں۔ متحارب سیاسی فریق اپنی دانش اور فہم کھو رہے ہیں۔غیرجانبدار اورسینئر و بااعتماد شخصیات آگے بڑھیں،قومی فرض ادا کریں اور قومی ترجیحات پر حکومت سیاست اور ریاست کو متفق کیا جائے۔صدارتی نظام ہو یا پارلیمانی، عمل نہ کیا جائے تو دونوں کا حشر خراب ہی ہوا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1