نوازشریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا فیصلہ درست،اعتزاز احسن

نوازشریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا فیصلہ درست،اعتزاز احسن

  



لاہور (نامہ نگارخصوصی)پاکستان پیپلز پارٹی کے راہنماء اورسینئر قانون دان اعتزاز احسن نے کہاہے کہ میاں محمد نوازشریف کو علاج کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ درست ہے،میاں نواز شریف کی ضمانت منظور ہوچکی ہے،عدالت کو اس چیز سے کوئی غرض نہیں کہ ضمانت منظور ہونے کے بعد ملزم کہاں جاتاہے اور کہاں رہتاہے،عدالت کی منشا تو یہ ہوتی ہے کہ ملزم مقررہ تاریخ پر حاضر ہوں،،گزشتہ روز لاہور ہائی کورٹ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے وزیراعظم عمران خان کے دو دن رخصت پر جانے کے حوالے سے کہا کہ فیصلہ پسند نہیں آیا تو چھٹی پر جانے سے کوئی فرق نہیں پڑتا،اس کا مطلب یہ ہے کہ عمران خان ٹینشن میں ہیں اور ریلیکس کرناچاہ رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ جس کا نام ای سی ایل میں ڈالاجائے اسے عدالت سے دادرسی کا حق حاصل ہے،انہوں نے اس بات پرسخت ناپسندیدگی کا اظہارکیا کہ سوشل میڈیا پر ان کے نام سے میاں نواز شریف کے خلاف جعلی پیغامات بنا کر چلائے جارہے ہیں،انہوں نے کہا کہ یہ پی ٹی آئی والوں کا کام ہے،میری زبان تو پارلیمانی ہے،جعلی پیغامات بنانے والوں کو نقصان ہوگا،انہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف کا حامی نہیں لیکن ان کے حق میں لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ تکنیکی طور پرصحیح ہے،نواز شریف اب جارہے ہیں،مسلم لیگ (ن)کو اب نیا سوچنا پڑے گا،ان کے بیٹے پہلے چلے گئے ایک یادونوں بیٹے،شہباز شریف کا داماد اور سمدھی اسحاق ڈار مفرور ہیں، نواز شریف بھی اکیلی مریم کو چھوڑ کر اب جارہے ہیں، میاں صاحب کو تو میں مانتا نہیں، یہ تو 2000ء میں مشرف سے معاہدہ کر کے بھاگ گئے تھے، نواز شریف نے چودھری نثار کو رہائی نہیں دلوائی تھی، اس وقت مشاہد حسین، خواجہ آصف، شاہد خاقان عباسی بھی حراست میں تھے، نواز شریف دیگر ساتھیوں کو چھوڑ کر باہر چلے گئے تھے آج بیٹی کو چھوڑ کے جا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ سندھ سے فون آرہے ہیں کہ نواز شریف پنجابی ہے تو اسے باہر بھیج رہے ہیں، اگر سندھی ہوتا تو نہ بھیجتے،آصف زرادری کا کیس کراچی میں سنا جانا چاہیے،مگر اسلام آباد میں سنا جارہا ہے،آصف زرداری کیس کی سماعت فی الفورکراچی منتقل کی جائے،ایک کو ریلیف دینے پر صوبائی تعصب اجاگر ہوگا۔

اعتزاز احسن

مزید : صفحہ آخر