جمعیت علمائے اسلام (ف) کا پانچویں روز بھی مختلف شہروں میں دھرنا،ٹریفک کی روانی متاثر

جمعیت علمائے اسلام (ف) کا پانچویں روز بھی مختلف شہروں میں دھرنا،ٹریفک کی ...

  



بنوں،ملاکنڈ،جیکب آباد،کراچی،لاہور،فیروزوالہ(مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی  این این آئی،نمائندہ پاکستان)جمعیت علمائے اسلام (ف)کے پلان بی کے تحت مسلسل پانچویں روز بھی ملک کے مختلف شہروں کی اہم شاہراہوں پر دھرنے دیئے گے جس کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر ہوئی۔بنوں میں جے یو آئی ف کے پلان بی کے تحت لنک روڈ انڈس ہائی وے پر کارکنوں نے دھرنا دیا۔کارکنوں نے لنک روڈ پر انڈس ہائی وے سے مختلف شہروں کو جانے والے راستوں کو رکاوٹیں ڈال کر بند کر دیا۔مالاکنڈ میں بھی پل چوکی چکدرہ کے مقام پر جے یو آئی کے کارکنوں نے مین جی ٹی روڈ پر رکاوٹیں کھڑی کرکے سڑک بلاک کر رکھی ہے۔جیکب آباد میں سندھ بلوچستان بائی پاس زیرو پوائنٹ اور کندھ کوٹ میں سندھ بلوچستان اور پنجاب کو ملانے والی قومی شاہراہ، بائی پاس پر بند ہے۔سکھر، شکار پور،کندھ کوٹ، کشمور جانے والی گاڑیاں متبادل راستے سے گزاری جا رہی ہیں۔کراچی میں جمعیت علمائے اسلام کے کارکنوں نے پانچویں روز بھی حب ریور روڈ پر دھرنا دیا جس کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر رہی، گھوٹکی میں دھرنے کے باعث سندھ پنجاب دونوں اطراف سے ٹریفک معطل رہی جس سے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا رہا۔لاہور میں بھی جے یو آئی ف کے کارکنوں نے امامیہ کالونی کے نزدیک جی ٹی روڈ کی ایک سائیڈ ٹریفک کیلیے بند کر دی۔سڑک کی ایک سائیڈ بلاک ہونے کے باعث جی ٹی روڈ پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔جمعیت علما اسلام (ف)پنجاب کے جنرل سیکرٹری مولانا صفی اللہ نے دھرنے کے شرکا ء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب تک ہمارے مطالبات تسلیم نہیں ہوجاتے ملک گیراحتجاج اوردھرنوں کا سلسلہ جاری رہے گا۔انہوں نے کہاکہ احتجاج کا دائرہ کار سڑکوں سے شہروں کے اندر بڑھائیں گے،قیادت نے حکم دیا تو فیروزپور روڈ،مال روڈ،شیخوپورہ روڈ اورملتان روڈکوبھی بندکردیں گے۔ کسی بھی نا خوشگوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے پولیس کی بھاری نفری تعینات رہی،رات کے وقت دھرنا ختم کر دیا گیا۔ 

دھرنے

مزید : صفحہ اول