قبائلی رسم ورواج کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،ملک ایاز

قبائلی رسم ورواج کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،ملک ایاز

  



باجوڑ (نمائندہ پاکستان) ضلع باجوڑ سمیت تمام ضم شدہ اضلاع میں رسم رواج کے فیصلوں کو سبوتاژ کرنے سے خانہ جنگی کا خطرہ ہے ملک محمد ایاز اور ملک شاہین کا گرینڈ جرگے سے خطاب،ہمیں صدیوں پرانے رسم ورواج کو سبوتاژ کرنے سے قبائلی اضلاع میں خطرناک نتائج برآمد ہونگے ان خیالات کا اظہار ملک محمد ایاز اور ملک شاہین خان نے برمکی ضلع باجوڑ میں قبائلی مشران اور علمائے کرام کے ایک گرینڈ جرگے سے اپنے خطاب کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ ہم نے ضلع بھر میں ایسے تنازعات جس میں دو قبیلوں کے درمیان علاقائی رسم ورواج کے مطابق فیصلے کئے ہیں ان کو سبوتاژ کرنے سے علاقے میں دوبارہ تصادم کا خطرہ پیدا ہوجائے گا،تحصیل ماموند قوم دولت خیل اور لوئیگی خیل اقوام کے درمیان پرانی دشمنی چلی آرہی تھی جس میں تقریباً 8 افراد قتل ہوچکے ہیں اور درجنوں افراد زخمی ہوچکے ہم نے علاقائی رسم ورواج کے مطابق قاتل گروپ کے کئی افراد کو علاقہ بدر کرکے مقتولین کے ورثاء کیلئے دیت دینے کا فیصلہ کیا لیکن موجودہ نئے نظام کے تحت دوبارہ اس مسئلے کو چھیڑ کر خانہ جنگی کی کوشش کی جارہی ہے جس سے حالات دوبارہ خراج ہونے کا خدشہ پیدا ہوچکا ہے انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے سوموٹو الیکشن لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ رسم ورواج کے مطابق تمام سابقہ فیصلوں کو برقرار رکھا جائے اور عدالتوں میں اس کی سماعت نہ کی جائے ورنہ ایک بار پھر علاقے کا امن تہہ وبالا ہوجائے گا جس کو معمول پر لانے کیلئے کسی کی طاقت نہیں ہوسکتی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر