پی ٹی آئی حکومت ایک سال میں ہی عوامی مقبولیت کھو چکی، شیراعظم وزیر

  پی ٹی آئی حکومت ایک سال میں ہی عوامی مقبولیت کھو چکی، شیراعظم وزیر

  



بنوں (بیورورپورٹ)پاکستان پیپلز پارٹی خیبر پختونخوا کے پارلیمانی لیڈر حاجی شیراعظم خان وزیر نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت ایک سال میں ہی عوامی مقبولیت کھوچکی ہے اور عوام ابھی سے عوام دشمن پالیسیوں پر حکومت کو بددعائیں دے رہے ہیں 2020میں پاکستان کے عوام نئے وزیراعظم کو دیکھنا چاہتے ہیں حکومت کی داخلی وخارجی پالیسیاں ناکام ہوچکی ہیں حکومت چلانا سلیکٹڈ وزیر اعظم کا کام نہیں بلکہ عوامی وزیر اعظم کا کام ہے عمران خان نیازی کو عوام نے منتخب نہیں کیا ہے وہ عوام کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈال کر وزیر اعظم کی کرسی پر قبضہ کرچکے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ عوام کو ایک سال میں ہی بدیلی سرکار نے خون کے آنسو رلادیا ہے کیونکہ ٹماٹر کی قیمت نے ڈالر کو بھی تین گنا پیچھے چھوڑ دیا ہے آٹا،گھی،چینی،دال،چاول اور اشیائے خوردونوش کی قیمتیں آسان سے باتیں کرنے لگی ہیں غریب عوام دو وقت کی روٹی کیلئے ترس رہے ہیں آئی ایم ایف سے قرض لینے کی صورت میں خود کشی کا اعلان کرنے والے عمران خان نے آئی ایم ایف سے کم وقت میں ریکارڈ قرضہ لیا ان کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت میں لوگ باہر کے ملکوں سے نوکریاں لینے آئیں گے لیکن صرف ایف بی آر چیئرمین اور گورنر سٹیٹ بینک کے سوا کوئی اور نہیں آیاعوام پوچھ رہی ہے کہ کہاں گئے 50لاکھ گھر اور ایک کروڑ نوکریاں،بلکہ تحریک انصاف کی حکومت میں عوام بیروز گار ہورہے ہیں سونے کی قیمت،ڈالر اور روز مرہ کے استعمال کی اشیاء تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں اور عوام اس حکومت سے بیزار ہوچکے ہیں اور انکی نظریں پیپلز پارٹی پر لگی ہیں کیونکہ پیپلز پارٹی غریبوں،مزدوروں،کسانوں اور ناداروں کی پارٹی ہے جسمیں نوکریوں کثرت سے ملتی ہیں اور مہنگائی نہیں ہوتی ہے انہوں نے مذید کہا کہ نواز شریف کے معاملے پر حکومت کو شرمندگی کا سامنا ہے اور حکومت نے نہ تو انسانی ہمدردی کا مظاہرہ کیا نہ ہی عدالتی فیصلے کا احترام کیا اور آخر میں شرمندگی بھی اٹھانی پڑی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر