ملیر میں آٹھ لاکھ بچوں کو ٹائیفائیڈ ویکسین دی جائے گی،مرتضی بلوچ

ملیر میں آٹھ لاکھ بچوں کو ٹائیفائیڈ ویکسین دی جائے گی،مرتضی بلوچ

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضی بلوچ نے کہا ہے کہ حکومت سندھ صوبے بھر میں بیماریوں کے خلاف مہم جاری رکھے ہوئے ہے اور حکومت کی کوشش ہے کہ تمام بچوں کو ٹائیفائیڈ سمیت تمام بیماریوں سے محفوظ رکھا جائے۔ یہ بات انہوں نے پیرکوسندھ حکومت کی جانب سے ٹائیفائڈ ویکسینیشن مہم کے آغاز کے موقع پر میمن گوٹھ ہسپتال میں مھم کا افتتاح کرتے ہوئے کہی۔ صوبائی وزیر نے ویکسین لگنے والے بچے کو نشان لگا کر مھم کا آغاز کیا۔میمن گوٹھ ہسپتال میں افتتاحی تقریب میں ڈی ایچ او ملیر ڈاکٹر علی احمد میمن اور ایم ایس نے صوبائی وزیر غلام مرتضی بلوچ کو مھم سے متعلق بریفنگ دی۔ صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضی بلوچ کو بتایا گیا کہ ٹائفائیڈ مھم میں ڈسٹرکٹ ملیر کے 7 لاکھ 77 ہزار بچوں کو ویکسین لگائی جائے گی اور اس مہم کے دوران 646 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جو 9 سال سے 15 سال تک کے بچوں کی ویکسین کی جائے گی۔ صوبائی وزیر برائے انسانی بستیوں غلام مرتضی بلوچ نے کہا کہ سندھ حکومت ٹائیفائیڈ اور ڈینگی کے لِے جامع کام کر رہی ہے اور امید ہے کہ اس مہم کے مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ٹائیفائیڈ ویکسین مھم کو موثر بنانے کے لئے علاقوں میں آگہی مہم بھی جاری رکھی جائے تاکہ والدین بھرپور طریقے سے حصہ لے سکیں۔

مزید : صفحہ آخر