قیامت کی نشانی، سوتیلے باپ نے اپنی بیٹی کو اغوا کر کے اُس کے ساتھ 9 بچے پیدا کر لئے

قیامت کی نشانی، سوتیلے باپ نے اپنی بیٹی کو اغوا کر کے اُس کے ساتھ 9 بچے پیدا کر ...
قیامت کی نشانی، سوتیلے باپ نے اپنی بیٹی کو اغوا کر کے اُس کے ساتھ 9 بچے پیدا کر لئے

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) انسان جب اخلاقی پستی میں گرنے پر آئے تو ایسا گرتا ہے کہ دیکھ کر شیطان بھی شرم سے منہ چھپاتا پھرے۔ اب اس امریکی بدطینت شخص ہی کو دیکھ لیں جس نے اپنی کم عمر سوتیلی بیٹی کو اغواءکرکے اس کے ساتھ 9بچے پیدا کر ڈالے۔ میل آن لائن کے مطابق اس بدقماش کا نام ہنری پیٹے ہے جس نے 1997ءمیں روزلین مک گنیس نامی لڑکی کو اغواءکیا جو اس وقت 11سال کی تھی۔ ہنری نے روزلین کی ماں کے ساتھ چند ماہ قبل شادی کی تھی اور پھر ایک دن روزلین کو سکول سے لیا اور سمگل کرکے میکسیکو لے گیا جہاں اگلے 19سال تک اسے محبوس رکھ کر جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔

رپورٹ کے مطابق ان 19سالوں میں ان کے ہاں 9بچے پیدا ہوئے۔ پھر ایک روز میکسیکو میں ایک سپرسٹور میں شاپنگ کے دوران ایک اجنبی جوڑے نے روزلین کو ہنری کے ساتھ دیکھا۔ اس کی حالت دیکھ کر جوڑے نے روزلین سے استفسار کیا تو اس نے انہیں حقیقت بتا دی اور اس جوڑے نے اسے میکسیکو سے فرار ہونے میں مدد دی اور وہ بھاگ کر واپس امریکہ آ گئی۔ اس کے ایک سال بعد2017ءمیں ہنری کو بھی گرفتار کر لیا گیا اور اب وہ امریکہ کی جیل میں قید ہے اور اس کے خلاف مقدمہ چل رہا ہے۔ ’دی ڈاکٹر اوز شو‘ میں گفتگو کرتے ہوئے روزلین نے اپنی یہ دکھ بھری داستان بیان کی۔

اس نے بتایا کہ ”ہنری نے ان 19سالوں میں مجھے کبھی ایک لمحے کے لیے بھی اکیلا نہیں چھوڑا اور جب وہ کام پر جاتا تو گھر کو باہر سے تالا لگا کر جاتا۔ وہ کبھی کسی کو میرے قریب نہیں آنے دیتا تھا۔ اس روز سٹور میں اس اجنبی میاں بیوی نے جب ہماری عمروں کا فرق دیکھا اور ہمارے ساتھ 9بچے دیکھے تو انہیں شک ہوا۔ ہمارے پاس پیسے کم تھے جو ان میاں بیوی نے ادا کیے۔ انہوں نے ہنری سے پوچھا کہ تم کہاں رہتے ہو لیکن ہنری نے انہیں نہیں بتایا اور وہاں سے فوراً ہمیں لے گیا مگر اس جوڑے کو یقین ہو گیا کہ کچھ تو غلط ہے چنانچہ وہ خفیہ طور پر ہمارے پیچھے چلے آئے اور دیکھ لیا کہ ہم کہاں رہتے ہیں۔ پھر انہوں نے مجھ سے رابطہ کیا اور میں نے انہیں ساری کہانی سنا دی جس پر انہوں نے میری مدد کرنے کو کہا اور پھر میں ان کی مدد سے فرار ہو کر امریکہ آنے میں کامیاب ہو گئی۔ اگر وہ میاں بیوی اتنی پروا نہ کرتے تو شاید میں آج بھی ہنری کی قید میں ہوتی۔ ان سالوں میں ایسا کوئی ظلم اور استحصال نہیں ہے جو ہنری نے میرے ساتھ نہ کیا ہو۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس