”سرفراز احمد کو کپتانی سے ہٹانے کا طریقہ غلط ہے کیونکہ۔۔۔“ معین خان پھر میدان میں آ گئے

”سرفراز احمد کو کپتانی سے ہٹانے کا طریقہ غلط ہے کیونکہ۔۔۔“ معین خان پھر ...
”سرفراز احمد کو کپتانی سے ہٹانے کا طریقہ غلط ہے کیونکہ۔۔۔“ معین خان پھر میدان میں آ گئے

  



جیکب آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان معین خان نے کہا ہے کہ قومی کرکٹ ٹیم کی کپتانی سے سرفراز احمد کو ہٹانے کا طریقہ کار بالکل غلط ہے، سرفراز نے پاکستان کو بحیثیت کھلاڑی اور کپتان بہت ساری فتوحات دلائی ہیں تو ان کو ایسے نہیں ہٹانا چاہیے تھا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے زیر اہتمام مقامی شادی ہال میں منعقدہ ایک تقریب میں شرکت کے موقع پر ذرائع ابلاغ سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سرفراز احمد کو ٹیسٹ کرکٹ سے ضرور ہٹاتے لیکن ٹی 20 میں تو اس نے گزشتہ ایک سال سے قومی ٹیم کو نمبر ون رکھا ہوا تھا۔

معین خان کا کہنا تھا کہ سرفراز احمد فٹ ہیں اور وہ ڈومیسٹک کرکٹ میں پرفارمنس دے کر ون ڈے، ٹی 20 اور ٹیسٹ کرکٹ میں واپس آ سکتے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ پی سی بی کا ہر چیئرمین ٹیم کو بہتر کرنے کا نعرہ مارتا ضرور ہے مگر بہتر بنا نہیں پاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی کرکٹ میں یوتھ ڈویلپمنٹ نہ ہونے کی وجہ سے پرفارمنس بہتر نہیں ہورہی ہے۔یوتھ ڈویلپمنٹ پروگرام مضبوط ہونے کی وجہ سے آسٹریلیا کی ٹیم نے سب سے زیادہ ورلڈ کپ جیتے ہیں۔ آسٹریلیا میں کرکٹ ٹیم کی کامیابی کا راز بہت زیادہ مانیٹرنگ کرنا اور قوانین کو سخت بنانا ہے۔

مزید : کھیل